یورپ میں حملے، القاعدہ کے مبینہ منصوبے کا سراغ

پیرس میں فوج تعینات
Image caption پیرس میں ایفل ٹاور جیسے مقامات پر فوج تعینات ہے

انٹیلیجنس ذرائع کے مطابق القاعدہ یورپ کے تین شہروں میں ممبئی حملوں کی نوعیت کے بڑے کمانڈو حملوں کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

اطلاعات کے مطابق یورپ اور امریکہ میں انٹیلیجنس ادارے کئی ماہ سے اس منصوبے کی نگرانی کر رہے ہیں۔ انہوں نے اس کو نا کام بنانے کے لیے اپنی معلومات کو خفیہ رکھا ہوا تھا تاہم اب یہ معلومات امریکہ میں ’لیک‘ کر دی گئی ہے۔

القاعدہ کے اس منصوبے کے تحت مسلح حملہ آور شہریوں کو یرغمال بنا کر انہیں ہلاک کرتے اور دہشت کا ماحوں قائم کرتے۔ منصوبے کے تحت برطانیہ، فرانس اور جرمنی کے شہروں پر حملے کیے جاتے۔

ان تینوں ممالک میں سکیورٹی پہلے سے ہی ’ہائی الرٹ‘ پر ہے۔

اطلاعات کے مطابق یہ منصوبہ پاکستان کے قبائلی علاقوں میں موجود القاعدہ رہنماوں نے تیار کیا تھا۔ اس میں مسلح جہادیوں کی ٹیموں کو استعمال کیا جاتا اور وہ لاہور میں سری لنکا کی کرکٹ ٹیم پر حملہ، پولیس تربیتی مرکز پر حملہ ، جی ایچ کیو پر حملہ، اور پریڈ گراؤنڈ مسجد پر حملے جیسی کارروائی کرتے ۔

خیال ہے کہ یہ منصوبۃ خیالی مرحلے سے پلاننگ کے مرحلے میں آ چکا تھا اور اس کی دیگر تیاریاں شروع ہو چکی تھیں۔

اسی بارے میں