فرانس کو اوساما بن لادن کی وارننگ

اوسامہ بن لادین
Image caption اوسامہ بن لادین کا یہ آڈیو ٹیپ الجزیرہ ٹی وی چینل پر نشر کیا گیا ہے

اوساما بن لادن کا ایک مبینہ آڈیو پیغام منظر عام پر آیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ نائجیریا میں پانچ فرانسیسیوں کا اغواء فرانس سے بدلا تھا۔

ان کا کہنا ہے کہ ان افراد کو فرانس کی جانب سے مسلمانوں کے خلاف نا انصافیوں کے بدلے میں اغوا کیا گیا تھا۔

انکا کہنا ہے کہ حال ہی میں فرانس کی جانب سے نقاب پر پابندی سامراجیت کی زیادتیوں کا حصہ ہے۔

یہ آڈیو ٹیپ الجزیرا ٹی وی پر نشر کی گئی ہے۔

اس آڈیو ٹیپ میں جس شخص کی آواز ہے اس کی شناخت اوساما بن لادن کے طور پر کی گئی ہے۔ آڈیو پیغام میں بن لادن فرانس سے افغانستان سے اپنی فوج بلانے کے لیے کہتے ہیں۔

امریکہ پر 9/11 کے حملوں کے بعد القاعدہ کے رہنما اوساما لادن کی امریکہ کو تلاش ہے۔

بعض افراد کا کہنا ہے کہ اوسامہ بن لادن کئی برس پہلے مر چکے ہیں بعض کا کہنا ہے کہ وہ ابھی زندہ ہیں اور افغانستان اور پاکستان کے خطے میں قیام پزیر ہیں۔

گزشتہ ماہ نائجیریا میں یورینیم کی ایک کان سے پانچ فرانسیسی شہریوں کوالقاعدہ کے شدت پسندوں نے اغوا کرلیا تھا۔

کہا جاتا ہے کہ اغوا کیے جانے والے ان شہریوں کو پڑوسی ملک مالی کے شمال مغربی علاقے میں رکھا گیا ہے۔

مالی اور نائجیریا میں حکام نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا تھا کہ انہیں یقین ہے کہ اغوا شدہ افراد ابھی بھی زندہ ہیں۔

اسی بارے میں