نوبیل انعام تقریب، انیس ممالک کا بائیکاٹ

Image caption لیو شاؤ بو چین میں زیرِ حراست ہیں

نوبیل کمیٹی کے مطابق چین اور دنیا کے دیگر اٹھارہ ممالک کا کہنا ہے کہ وہ جمعہ کو نوبیل امن انعام کی تقریب میں شرکت نہیں کریں گے۔

اس برس امن کا نوبیل انعام چین کے منحرف رہنما لیو شاؤ بو کو دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اس فیصلے پر چین کی جانب سے کڑی تنقید کی گئی ہے جبکہ نوبیل کمیٹی نے جیاباؤ کو چین میں حقوقِ انسانی کی جدوجہد کی سب سے نمایاں نشانی قرار دیا تھا۔

نوبیل کمیٹی کے مطابق وہ ممالک جنہوں نے اس تقریب میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ان میں روس، سعودی عرب، پاکستان، عراق اور ایران بھی شامل ہیں۔

اس سے قبل چینی حکام نے کہا تھا کہ اقوامِ عالم کی ایک بڑی.تعداد اس تقریب میں شریک نہیں ہوگی۔

لیو شاؤ بو کو گزشتہ برس ریاست کے خلاف بغاوت پر اکسانے کے جرم میں گیارہ سال کی قید سنائی گئی تھی۔ان پر الزام تھا کہ انہوں نے ایک دستاویز لکھی تھی جس میں سیاسی اصلاحات کی بات کی گئی تھی۔

چین کی وزارتِ خارجہ نے نوبل کمیٹی کو تنبیہ کی تھی کہ لیو کو انعام نہ دیا جائے۔ چین کے مطابق یہ نوبل کے اصولوں کے مترادف ہے۔

اسی بارے میں