امریکی نمائندۂ خصوصی رچرڈ ہالبروک انتقال کرگئے

Image caption ہالبروک کو جمعہ کو ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا

افغانستان اور پاکستان کے لیے امریکی صدر کے خصوصی ایلچی رچرڈ ہالبروک مختصر علالت کے بعد واشنگٹن میں انتقال کر گئے ہیں۔

ان کی عمر انہتر برس تھی اور وہ دل کے عارضے میں مبتلا تھے۔

رچرڈ ہالبروک کا سفارتی سفر: تصاویر

ہالبروک کی زندگی پر ایک نظر

سینئر سفارتکار رچرڈ ہالبروک کو چار دن قبل اس وقت ہسپتال میں داخل کروایا گیا تھا جب دفتر میں کام کرتے ہوئے ان کی طبیعت بگڑ گئی تھی۔ ہسپتال میں فوری طور پر ان کا دل کی شریان کا آپریشن کیا گیا تھا تاہم ڈاکٹروں نے ان کی حالت کو تشویش ناک قرار دیا تھا۔

اتوار کو رچرڈ ہالبروک کا دوسرا آپریشن کیا گیا تاکہ ان کے دورانِ خون کو بہتر بنایا جا سکے تاہم ان کی حالت بہتر نہ ہو سکی اور وہ پیر کی شام انتقال کرگئے۔

رچرڈ ہالبروک کو صدر باراک اوباما نے جنوری دو ہزار نو میں پاکستان اور افغانستان کے لیے اپنا نمائندہ خصوصی مقرر کیا تھا۔ وہ ڈیٹن امن معاہدے کے سلسلے میں اپنی کوششوں کے حوالے سے بھی جانے جاتے ہیں۔ اس معاہدے کے نتیجے میں بوسنیائی جنگ بالآخر ختم ہوئی تھی۔

سنہ 1962 میں سفارتی کیرئر کے آغاز کے بعد سے رچرڈ ہالبروک نے جان ایف کینیڈی سے لے کر براک اوباما تک ہر ڈیموکریٹ صدر کے ساتھ کام کیا لیکن بوسنیا میں قیامِ امن میں ان کے کردار نے انہیں امریکی خارجہ پالیسی کا ایک اہم کردار بنوایا۔

سفارتی امور کے لیے بی بی سی کی نامہ نگار بریجیٹ کینڈل کے مطابق رچرڈ ہالبروک منظرِ عام پر دوستانہ تعلقات اور پسِ پردہ صاف گوئی کے لیے جانے جاتے تھے۔ ان کا انتقال ایک ایسے موقع پر ہوا ہے جب امریکہ میں افغانستان میں طالبان کے خلاف مہم میں کارکردگی کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

ہالبروک کے انتقال پر امریکی صدر براوک اوباما کا کہنا تھا کہ ’وہ حقیقتاً ایک انوکھی شخصیت تھے جنہیں ان کی انتھک سفارتکاری، حب الوطنی اور امن کی چاہت کے لیے یاد رکھا جائے گا‘۔

امریکی وزیرِ خارجہ ہلیری کلنٹن نے انہیں ان الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا کہ وہ دھن کے پکے سفارتکاروں میں سے تھے۔ ہلیری کلنٹن کا کہنا تھا کہ ’وہ اپنی قسم کے ایک ہی شخص تھے۔ ایک سچے سفارتکار اور یہی وجہ ہے کہ ان کا انتقال زیادہ تکلیف دہ ہے‘۔

سابق برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا ہے کہ ’وہ ایک ایسے شاندار آدمی اور ایک شاندار سفارتکار تھے جنہوں نے ایک پرامن دنیا کے قیام کے لیے بےحساب کام کیا‘۔ اس سے پہلے ہالبروک کے انتقال سے قبل امریکی صدر براک اوباما نے انہیں امریکی خارجہ پالیسی کی اہم ترین شخصیات میں سے ایک قرار دیا تھا۔

اسی بارے میں