آخری وقت اشاعت:  بدھ 22 دسمبر 2010 ,‭ 05:14 GMT 10:14 PST

ہوائی اڈوں کی کار کردگی پر کڑی تنقید

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

ونڈوز میڈیا یا ریئل پلیئر میں دیکھیں/سنیں

یورپی یونین کے کمشنر ٹرانسپورٹ نے برفباری کی وجہ سے مسافروں کو درپیش مشکلات پر ہوائی اڈوں کی کار کردگی پر کڑی تنقید کی ہے۔ انھوں نے کہا ہوائی اڈوں کو مناسب ساز وسامان سے لیس کروانے کے لیے مطلوبہ قانون سازی پر غور کیا جائیگا۔

یورپ میں شدید برفباری اور سرد موسم کی وجہ سے سینکڑوں پروازوں کی منسوخی اور متعدد ٹرینیں بحال نہ ہونے کی وجہ سے ہزاروں مسافروں بدستور مشکلات کا شکار ہیں۔

منگل کو مزید ایک ہزار کے لگ بھگ پروازیں منسوخ کی گئیں۔

یورپی یونین کے کمشنر ٹرانسپورٹ سیم کالاس نے مغربی یورپ کے ہوائی اڈوں کی انتظامیہ سے زور دیکر کہا ہے کہ انھیں ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لیے سنجیدگی سے منصوبہ بندی کرنی ہوگی۔

مسٹر کلاس کا کہنا ہے کہ مغربی یورپ کے ملکوں کو، جن میں فرانس ، جرمنی اور بلجئیم شامل ہیں، شمالی یورپی ملکوں سے سیکھنے کی ضرورت ہے۔ جہاں شدید برفباری سے نمٹنے کے لیے مناسب انتظامات موجود ہیں۔

تاہم یورپی ہوائی اڈوں کی ایسوسی ایشن ’ایر پورٹ کونسل انٹر نیشنل ‘ کہ شدید موسم کے باوجود یورپ سے 88 فیصد پروازیں چلتی رہیں۔

برطانیہ میں اب سیاسی سطح ہر یہ بحث چھڑ گئی ہے کہ کہ موسم کے اس پر شدت بدلتے انداز سے نمٹنے کے لیے ایسی کیا حکمت عملی بنائی جائے جس سے زندگیاں اس حد تک متاثر نہ ہوں جس کا اس وقت سامنا ہے۔

فرینکفرٹ میں منگل کو تین سو پروازیں منسوخ ہوئیں

برٹش ائرویز کے حکام نے مسافروں سے کہا ہے کہ کرسمس تک تمام مسافروں کو اُن کی منزلوں تک پہنچانا شاید ممکن نہیں ہو سکے گا۔ کئی مسافر چوتھی رات ہوائی اڈوں پر گزار رہے ہیں۔ ائرپورٹ پر تیزی سے برف ہٹانے کے علاوہ پروازوں کے لیے رات کے کرفیو میں بھی نرمی کر دی گئی ہے تاکہ کئی دنوں سے پھنسے ہوئے مسافروں کو بھیجا جا سکے۔

ہیتھرو کا دوسرا رن وے کھلنے کے بعد بدھ کو ہتھرو سے دو تہائی پروازیں روانہ ہوسکیں گیں۔

پیرس، ایمسٹرڈیم اور برسلز میں صورت حال بہتر ہورہی ہے، مگر جرمنی کے مصروف ترین فرینکفرٹ ائرپورٹ پر تازہ برفباری کے بعد منگل کو تین سو کے قریب پروازیں منسوخ کی گئی ہیں۔ جبکہ آئر لینڈ کا ڈبلن کے قریب ایک بڑا ہوائی اڈہ بھی بند کردیا گیا ہے۔

لندن اور یورپ کے درمیان چلنے والی یورو سٹار ٹرین کے حکام نے مسافروں سے اپیل کی ہے کہ شدید ضرورتمند مسافروں کی جگہ بنانے کے لیے اگر ہوسکے تو وہ اپنے سفر کے پروگرام میں تبدیلی کرلیں۔

برفباری سے زیادہ متاثر ہونے والے یورپی ممالک میں برطانیہ، فرانس اور جرمنی شامل ہیں۔

[an error occurred while processing this directive]

BBC navigation

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔