’فلسطینی قیدی حقوق سے محروم‘

اسرائیل میں انسانی حقوق کی ایک تنظیم نے کہا ہے کہ اسرائیل کی سیکیورٹی سروس شین بیت کے زیر حراست فلسطینیوں کو وکلاء کی سہولت مہیا نہیں کی جاتی۔

انسانی حقوق کی تنظیم تشدد کے خلاف پبلک کمیٹی نے نے شین بیت کی طرف سے سنہ دو ہزار سے لے کر سنہ دو ہزار سات تک زیر تفتیش فلسطینیوں کے کیسوں کا تجزیہ کرنے کے بعد یہ بیان دیا ہے۔

اسرائیل کے قانون کے تحت ہنگامی اور غیر معمولی صورت حال میں گرفتار کیئے گئے مشتبہ افراد کو قید تناہی می رکھنے کی اجازت ہے۔

تاانسانی حقوق کی تنظیم نے دعوی کیا ہے جن کیسوں کا انھوں نے تجزیہ کیا ہے ان میں زیادہ تر ایسے تھے جن کے خلاف اتنے سنگین نوعیت کے الزامات نہیں تھے کہ اُن پر خصوصی قوانین کا اطلاق کیا جاتا اور ان کے بنیادی اور قانونی حقوق سے محروم رکھا جاتا۔

اسی بارے میں