ڈنمارک میں چار شدت پسند گرفتار

Image caption پولیس کے مطابق یہ حملہ آور یلین پوستن کے عملے کے زیادہ سے زیادہ لوگوں کو بھی ہلاک کرنا چاہتے تھے۔

ڈنمارک میں پولیس نے پیغمبر اسلام کے توہین آمیز خاکے شائع کرنے والے اخبار کے دفتر پر حملے کی سازش کے الزام میں چار لوگوں کو گرفتار کرلیا ہے۔

ڈنمارک کے خفیہ انٹیلی جینس ادارے کے مطابق گرفتار ہونے والے چار افراد میں سے تین سویڈن کے شہری ہیں جو ایک روز پہلے ہی ڈنمارک آئے تھے۔

گرفتار ہونے والوں کے پاس سے سائیلنسر لگا ہوا ایک پستول اور کچھ گولیاں وغیرہ برآمد کی گئی ہیں۔

پانچ برس پہلے ڈنمارک کے اخبار یلیند پوستن میں پیغمبر اسلام کے توہین آمیز خاکے شائع کرنے سے پوری دنیا کے مسلمانوں میں شدید اشتعال پیدا ہوا تھا۔

سیکیورٹی اہلکاروں کے مطابق گرفتار ہونے والے افراد اس عمارت میں داخل ہونے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے جس میں یلیند پوستن کی کوپن ہیگن ڈیسک کے دفاتر ہیں۔

پولیس کے مطابق یہ حملہ آور یلین پوستن کے عملے کے زیادہ سے زیادہ لوگوں کو بھی ہلاک کرنا چاہتے تھے۔

گرفتاریوں کے بعد پولیس حکام دعوٰی کر رہے ہیں کہ انہوں نے دہشت گردی کی ایک ناگزیر کارروائی کو ناکام بنا دیا ہے۔

پولیس کے مطابق گرفتار شدگان اسلامی شدت پسند ہیں جنہیں سوئیڈن کی پولیس کے قریبی تعاون سے گرفتار کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں