احمدی نژاد کی کار، دس لاکھ ڈالر کی بولی

Image caption محمود احمدی نژاد یہ کار تہران کی میئرشپ کے زمانے میں استعمال کرتے تھے

ایران کے صدر محمود احمدی نژاد کی تینتیس سال پرانی ذاتی کار کو خریدنے کے لیے دس لاکھ ڈالر کی بولی لگائی گئی ہے۔

ایرانی صدر نے گزشتہ ماہ اس کار کو نیلام کرنے کے لیے دیا تھا اور اس سے حاصل ہونے والی رقم ایک ایسے خیراتی ادارے کو دی جائے گی جو ملک کےنوجوان افراد کے لیےگھر تعمیر کرنے کے لیے پیسے اکھٹے کر رہا ہے۔

ایرانی صدر کی کارایک ایسے وقت میں بیچی جا رہی ہے جب ایرانی حکومت ملک میں توانائی اور خوراک کی ترسیل میں کٹوتی کرنے کا سوچ رہی ہے۔

ابتداء میں حکام کا خیال تھا کہ اس کار کی نیلامی سے دو ہزار ڈالرز کی رقم حاصل ہو گی تاہم اب اس کے لیے ایک ملین ڈالر کی بولی لگائی گئی ہے۔

احمدی نژاد کی یہ کار ایران کے جنوب مشرقی شہر ابدان میں فروری میں نیلام کی جائے گی۔ ایران کے شہر ابدان کے فری ٹریڈ زون کے سربراہ اصغر پرہزکار نے ایرانی نیوز ایجنسی کو بتایا کہ صدر کی کار کی نیلامی پرانی کلاسیکل کاروں کی نمائش میں کی جائے گی۔

اسی بارے میں