چلی میں شدید زلزلہ

لاطینی ملک چلی میں سات اعشاریہ ایک کی شدت کا زلزلہ ریکارڈ کیا گیا لیکن اس سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔

اس شدید زلزلے نے مرکزی چلی کے ہلا کر رکھ دیا لیکن سوائے مواصلات کو معمولی نقصان کے علاوہ کسی شخص کی ہلاکت یا زخمی ہونے کی خبر نہیں ہے۔

امریکی جیالوجیکل سروس کے مطابق سات اعشاریہ ایک شدت کے اس زلزلے کا مرکز دارالحکومت سینٹاگو سے تین سو ستر میل جنوب مغرب میں واقع تھا اور اس کی گہرائی پچیس کلو میڑ تھی۔

ساحلی علاقوں کے مکین سونامی کے خطرے کی وجہ سے محفوظ مقامات کی طرف بھاگ کھڑے ہوئے ۔ چلی کی حکومت نےلوگوں کو آگاہ کیا ہے کہ سونامی کا کوئی خطرہ نہیں ہے اور وہ اپنی گھروں کو لوٹ جائیں۔

گزشتہ سال فروری میں چلی میں آٹھ اعشاریہ آٹھ کی شدت سے زلزلہ آیا تھا جس وسیع پیمانے پر تباہی ہوئی تھی۔ اس زلزلہ میں کم از کم چار سو افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ چلی کی حکومت نے اس وقت بھی عالمی امداد کی اپیل نہیں تھی اور ابھی تک بنیادی ڈھانچے کو دوبارہ بحال کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے ادارے اونمی کے ڈائریکٹر ونسٹ ننیز نے کہا ہے کہ ابھی تک موصولہ اطلاعات کے مطابق سوائے ٹیلیفون کی کچھ لائینوں کے کسی اور نقصان کی اطلاع نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ نہ تو کسی شخص کے زخمی ہونے کی اور نہ ہی ہلاک ہونے کی اطلاع ہے۔