جاسوسہ کے لیے شیر کا تحفہ

روس کی ایک سابق جاسوسہ کو ایک ٹی وی پروگرام میں شیر کا بچہ تحفے میں پیش کیا گیا۔

روس کی سابق جاسوسہ اینا چیپمن جنہیں کچھ نو اور روسی جاسوسوں کے ہمراہ امریکہ کی قید سے رہا گیا، نے ایک ٹی وی پروگرام میں شرکت کی۔

اینا چیپمن نے امریکی حراست سے رہائی کے بعد شاذ و نادر کسی ایسی کارروائی میں حصہ لیا ہو جس سے انہیں مشہوری ملے۔ اینا چیپمن نے ٹی وی پروگرام کے دوران کہا کہ ان کی ہمیشہ یہ خواہش رہی ہے کہ وہ شیر کا بچہ اس وقت تک اپنے پاس رکھیں جبتک وہ خطرناک نہ ہو۔

اینا چیپمن کی یہ خواہش فوراً پوری کر دی گئی اور اسی موقع پر شیر کا بچہ سٹوڈیو میں لایا گیا اور سابقہ جاسوسہ کے حوالے کر دیا گیا۔

یہ واضح نہیں ہے کہ اینا چیپمن شیر کا بچہ اپنے ساتھ گھر لے کر گئی ہیں یا اس کہیں اور رکھا ہے۔ اینا نے اپنے شیر کا نام ’نینو‘ رکھا۔

روس میں ملک کی خاطر جاسوسی کرنے والوں کو اچھی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ روس کے موجودہ وزیر اعظم ولادی میر پوتن بھی سوویت یونین کے ٹوٹنے سے پہلے روس کی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی کے جی بی کے تربیت یافتہ ایجنٹ تھے۔

پروگرام میں اینا چیپمن کی ایک دوست کو اینا کے بارے میں بات چیت کے لیے بلایا گیا تھا۔ اینا کی دوست نےبتایا کہ ساق جاسوسہ نے ایک بار اس خواہش کا اظہار کیا تھا کہ وہ کسی انگریز شخص سے شادی کرکے برطانیہ میں رہائش پذیر ہوں گی۔ اینا چیپمن کی یہ خواہش پوری ہو چکی ہے اور انہوں نے ایک برطانوی شخص ایلکس چیمپن سے شادی کر رکھی ہے۔

اینا چیمپن نے پروگرام کے دوران کہا کہ وہ کبھی بھی یہ تسلیم نہیں کریں گی کہ وہ ایجنٹ تھیں لیکن انہوں نے یہ ضرور کہا کہ ان کے مشن کی ناکامی نے زندگی میں ان کے نئے مواقعوں کا وسلیہ کر دیا ہے۔ اینا چیپمن کو حکمران جماعت میں نوجوانوں سے متعقلق ایک اعلی عہدے پر فائز کیا گیا ہے