ایران: فضائی حادثے میں’ستّتر‘ ہلاک

فائل فوٹو، ائر ایران
Image caption ایران میں گزشتہ چند سالوں میں ہوائی جہازوں کے متعدد حادثات پیش آ چکے ہیں

ایران میں حکام کے مطابق ایران ائر کے ایک مسافر بردار ہوائی جہاز کے حادثے میں کم از کم ستّتر افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

ایران کے سرکاری خبر رساں ادارے ارنا نے ایرانی ریڈ کراس کے نائب سربراہ حیدر حیدری کے حوالے سے بتایا ہے کہ حادثے میں ستتر افراد ہلاک اور بتیس زخمی ہو گئے ہیں۔

انھوں نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

فضائی حادثے کی تصاویر

ایرانی ریڈ کراس کے ایک اہلکار محمود مظفر نے بتایا کہ طیارہ کئی حصوں میں تقسیم ہو گیا ہے تاہم کوئی دھماکہ یا آگ نہیں لگی ہے۔

اس سے پہلے ایران کی نیم سرکاری خبر رساں ایجنسی فارس نیوز کے مطابق جہاز میں ایک سو پانچ مسافر اور عملے کے ارکان سوار تھے جن میں سے کم از کم پچاس افراد زندہ بچ گئے ہیں۔

ایران ائر کا مسافر بردار ہوائی جہاز دارالحکومت تہران سے روانہ ہوا تھا اور شمال مغربی شہر اورمیہ کے نزدیک گر کر تباہ ہو گیا۔ اطلاعات کے مطابق ہوائی جہاز کو حادثہ خراب موسم کی وجہ سے پیش آیا جب کہ برف باری کی وجہ سے امدادی سرگرمیوں میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔

ایران کے سرکاری ٹی وی چینل کی ویب سائٹ کے مطابق ایک اہلکار نے بتایا ہے کہ ہوائی جہاز کو حادثہ تہران سے سات سو کلومیٹر دور مشرقی صوبے آذربائیجان کے شہر اورمیہ کے نزدیک پیش آیا۔

اہلکار کے مطابق جہاز ایک گھنٹہ تاخیر سے روانہ ہوا تھا اور خراب موسم کی وجہ سے حادثے کا شکار ہو گیا۔

ہنگامی سروسز کے سربراہ غلام رضا معصومی کا کہنا ہے کہ’اس وقت شدید برف باری کی وجہ سے امدادی سرگرمیوں میں رکاوٹ پیش آ رہی ہے، اس وقت جائے حادثہ کے اطراف میں ستائیس انچ تک برف ہے۔‘

ایران میں گزشتہ چند سالوں میں ہوائی جہازوں کے متعدد حادثات پیش آ چکے ہیں۔

جولائی سال دو ہزار نو میں شمالی ایران میں ہوائی جہاز کے ایک حادثے میں ایک سو ساٹھ سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ اس کے علاوہ سال دو ہزار تین میں فوج کے ایک ہوائی جہاز کے حادثے میں دو سو چھہتر فوجی اور عملے کے ارکان ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں