آخری وقت اشاعت:  جمعـء 9 ستمبر 2011 ,‭ 21:48 GMT 02:48 PST

امریکی فوج نے کیا کھویا یا پایا؟

میڈیا پلئیر

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

امریکی افواج گیارہ ستمبر دو ہزار ایک کے دہشتگرد حملوں کے بعد سے حالتِ جنگ میں ہیں۔ افغانستان اور عراق میں امریکی فوجیوں کو ایسی لڑائی لڑنا پڑی جس کا ان کے پاس تجربہ تھا نہ تربیت۔ اب تک ایک کھرب ڈالر سے زائد اخراجات والی اِن جنگوں میں لگ بھگ ساڑھے سات ہزار امریکی فوجی ہلاک ہوئے، ان گِنت زخمی ہوئے اور کئی فوجی، جو جسمانی طور پر صحیح حالت میں وطن واپس پہنچے، اُنہیں نفسیاتی بیماریوں کا سامنا ہے۔

دو ریٹائرڈ امریکی فوجی افسران کے تجربات اور خیالات کے ذریعے سنیے، کہ امریکی فوج نے ایک ادارے کی حیثیت سے کیا کھویا کیا پایا؟ واشنگٹن سے بی بی سی کے نامہ نگار پال ایڈمز کی رپورٹ کا ترجمہ پیش کر رہے ہیں ظہیرالدین بابر۔۔

[an error occurred while processing this directive]

BBC navigation

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔