چین: کلہاڑی بردار شخص کا حملہ، چار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption چین میں اس سے پہلے بھی اسی نوعیت کے متعدد بار حملے ہو چکے ہیں

چین میں کلہاڑی سے مسلح ایک شخص نے حملہ کر کے ایک نوجوان لڑکی سمیت چار افراد کو ہلاک اور ایک بچے سمیت دو افراد کو زخمی کر دیا ہے۔

چین کے سرکاری خبر رساں ادارے زنہوا نیوز کے مطابق یہ واقعہ صوبہ ہینان کے شہر گونجئی میں بچوں کے ایک سکول کے نزدیک پیش آیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ ایک تیس سالہ کاشت کار جس کے بارے میں خیال کیا جا رہا کہ اس کا ذہنی توازن ٹھیک نہیں ہے کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

چین میں اس سے پہلے بھی اس طرح کے واقعات پیش آ چکے ہیں اور ان میں سے زیادہ تر میں بچوں کے سکولوں کو نشانہ بنایا گیا۔

ایک مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ حملہ اس وقت کیا گیا جو لوگ اپنے بچوں کو سکول لیجا رہے تھے۔

گزشتہ ماہ شنگھائی میں بچوں کے دیکھ بھال کے مرکز میں کام کرنے والے ایک پناہ گزین شخص نے چاقو سے حملہ کر کے آٹھ بچوں کو زخمی کر دیا تھا۔

گزشتہ سال چین میں اس کے طرح کے یکے بعد دیگرے واقعات پیش آئے جن میں انفرادی طور پر افراد نے سکولوں پر حملے کر کے بچوں کو زخمی کر دیا۔

چین میں اس طرح کے حملوں کے بعد سکول اور چھوٹے بچوں کے مراکز کی سکیورٹی کے حوالے سے بحت جاری ہے۔

بیجنگ میں بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ اس طرح کے واقعات چین میں سماجی دباؤ کے مسائل کو اجاگر کرتے ہیں کہ تیز رفتار اقتصادی ترقی کے تناظر میں معاشرہ کس قدر تیزی سے تبدیل ہو رہا ہے اور اس میں ذہنی طور پر بیمار افراد کی علاج یا دیکھ بھال کو کس طرح سے نظر انداز کیا جا رہا ہے۔

اسی بارے میں