امریکی افواج کا آخری دستہ عراق سے روانہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption عراق میں جنگ کے عروج کے دوران ایک لاکھ ستّر ہزار امریکی فوجی تعینات تھے

عراق سے امریکی فوج کا آخری دستہ سرحد پار کر کے کویت پہنچ گیا ہے جس کے بعد عراق میں امریکی فوجی مہم کا اختتام ہوگیا ہے۔

کوئی ایک سو بکتر بند گاڑیوں میں سوار پانچ سو امریکی فوجیوں کے آخری قافلے نے رات بھر جنوبی عراق میں واقع صحرا میں سفر کرتے ہوئے اتوار کی صبح عراقی سرحد عبور کی اور کویت میں داخل ہوا۔

امریکی صدر براک اوباما اس ہفتے کے آغاز پر عراقی وزیراعظم نوری المالکی سے ملاقات کے دوران عراق میں جنگ کے باضابطہ خاتمہ کا اعلان کرچکے ہیں۔

عراق میں مارچ سنہ دو ہزار تین میں امریکی فوج نے حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں اس وقت کے عراقی سربراہ صدر صدام حسین کو اپنے اقتدار سے ہاتھ دھونا پڑے تھے۔

اس جنگ کے دوران کم و بیش ساڑھے چار ہزار امریکی فوجی ہلاک ہوئے، بتیس ہزار کے قریب زخمی ہوئے جبکہ اس جنگ میں دس کھرب امریکی ڈالر کی لاگت آئی۔ اس جنگ کے دوران ایک لاکھ کے قریب عراقی بھی اپنی جان سے گئے۔

عراق میں جنگ کے عروج کے دوران پانچ سو فوجی اڈے قائم تھے جبکہ ایک لاکھ ستّر ہزار امریکی فوجی تعینات تھے۔

امریکی فوج کے آخری قافلے کے جانے کے بعد اب عراق میں صرف ایک سو ستاون فوجی باقی رہ گئے ہیں جن کی ذمہ داری امریکی سفارتخانے میں تربیت فراہم کرنا اور سفارتی مشن کی حفاظت کرنا ہے۔

اکتوبر میں امریکی صدر براک اوباما نے اعلان کیا تھا کہ سنہ دو ہزار گیارہ کے آخر تک تمام امریکی فوج عراق چھوڑ دے گی۔ امریکی فوج کا انخلاء اس معاہدے کے تحت ہوا ہے جو سابق امریکی صدر جارج بش کے دور میں سنہ دو ہزار آٹھ میں طے پایا تھا۔

گزشتہ ہفتے شمالی کیرولائنا میں صدر اوباما نے عراق میں امریکی فوجیوں کی خدمات کو سراہا تھا۔ انہوں نے اعتراف کیا تھا کہ یہ جنگ ’متنازع‘ تھی تاہم انہوں نے کہا کہ امریکی فوج واپسی پر اپنے پیچھے ایک ’خودمختار، مستحکم، اور خود کفیل عراق‘ چھوڑ کر آرہی ہے۔

دوسری جانب نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ واشنگٹن میں اس بات پر تشویش پائی جاتی ہے کہ عراقی حکومت کا سیاسی ڈھانچہ مضبوط نہیں ہے اور یہ اپنی سرحدوں کی حفاظت کے سلسلے میں کمزور صلاحیت کا حامل ہے۔

یہ بھی خدشات ہیں کہ امریکی فوج کے انخلاء کے بعد اب عراق میں دوبارہ فرقہ وارانہ کشت و خون کا بازار گرم ہوسکتا ہے یا وہ ایران کا اثر و رسوخ قبول کر سکتا ہے۔

اسی بارے میں