امریکی تنبیہ، این جی اوز پر چھاپے منسوخ

مصر تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption چھاپوں کے دوران کئی دستاویزات قبضے میں لے لی گئی تھیں۔

امریکی محکمۂ خارجہ کا کہنا ہے کہ مصر کی حکومت نے امریکہ کو یقین دلایا ہے کہ ملک میں غیر سرکاری تنظیموں کے دفاتر پر چھاپے نہیں مارے جائیں گے۔

حکام کے مطابق دو امریکی تنظیموں سمیت ان گروپوں کی قبضے میں لی گئی املاک واپس لوٹا دی جائیں گی۔

بیان میں مزید بتایا گیا ہے کہ امریکی وزیرِ دفاع لیون پنیٹا نے مصر کے فوجی حکمران کو فون کر کے اس مسئلے پر بات کی ہے۔

مصر میں جمعرات کے روز دارالحکومت قاہرہ میں کام کرنے والی سترہ این جی اوز کے دفاتر پر چھاپے مارے گئے۔ ان تنظیموں کے بارے میں کہا گیا تھا کہ یہ غیر ملکی امداد سے چل رہی ہیں۔

مصر کی فوجی حکومت کہہ چکی ہے کہ وہ ملکی معاملات میں غیر ملکی مداخلت برداشت نہیں کے گی۔

لیکن مصری حکام کے اس اقدام پر امریکہ نے فوری رودِ عمل ظاہر کیا اور کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے اسے جمہوری اقدار پر حملہ قرار دیا۔ اس کے ساتھ ساتھ امریکہ نے یہ اشارہ بھی دیا کہ اگر ایسی کارروائیاں جاری رہیں تو وہ مصر کے لیے ایک ارب ڈالر سے زائد کی فوجی امداد پر نظرِ ثانی کر سکتا ہے۔

انسانی حقوق کے امریکی نگراں ادارے فریڈم ہاؤس کے ڈائریکٹر ڈیوڈ کرامر نے بی بی سی کو بتایا کے مصری حکام کی جانب سے کیے گئے نقصان کی تلافی کی یقین دہانی خوش آئند ہے۔

جن دفاتر پر چھاپے مارے گئے اور املاک قبضے میں لی گئیں ان کا دفتر میں ان میں شامل تھا۔

مصر میں حکام کے مطابق ایسے شواہد موجود ہیں جن سے ظاہر ہوتا ہے کہ بعض تنظیمیں مصری قانون کی خلاف ورزی کر رہی ہیں جن میں بلا اجازت کام کرنا شامل ہے۔

اسی بارے میں