’عرب ممالک کو فوج شام بھیجنی چاہیے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

قطر کے امیر نے کہا ہے کہ شام میں سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں شہریوں کی ہلاکتوں کو روکنے کے لیے عرب ممالک کو اپنی فوجیں شام بھیجنی چاہیے۔

قطر کے امیر شیخ حماد بن خلیفہ نے امریکی ٹی وی چینل سی بی ایس کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ شام میں شہریوں کی ہلاکتوں کو روکنے کے لیے ایک چھوٹی فوج کب جانا چاہیے۔

یہ پہلا موقع ہے کہ ایک عرب ملک کے سربراہ نے کھل کر شام میں فوجی مداخلت کی بات کی ہے۔

اقوامِ متحدہ کے مطابق پچھلے سال مارچ سے شروع ہونے والے مظاہروں میں پانچ ہزار شہری ہلاک ہو چکے ہیں۔

یاد رہے کہ قطر پہلا عرب ملک تھا جس نے لیبیا کے معمر قذافی کے خلاف نیٹو آپریشن میں شرکت کا اعلان کیا تھا۔ اس آپریشن کے باعث معمر قذافی کی حکومت کا خاتمہ ہوا تھا۔

سی بی ایس کے پروگرام سکسٹی منٹ میں شیخ حماد سے سب جب پوچھا گیا کہ کیا وہ عرب ممالک کی شام میں مداخلت کے حق میں ہیں تو ان کا جواب تھا ’شہریوں کی ہلاکت کو روکنے کے لیے کچھ فوجی تو بھیجنے چاہیے۔‘

.

اسی بارے میں