روس: پوتن کے لاکھوں حامی سڑکوں پر

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اگر وزیرِاعظم پوتن آئندہ دو بار صدراتی انتخاب میں کامیاب ہوتے ہیں تو وہ سنہ دو ہزار چوبیس تک اقتدار میں رہ سکتے ہیں۔

روس کے مختلف شہروں میں دسویں ہزار افراد نے وزیرِاعظم ولادی میر پوتن کے صدر بننے کی حمایت میں مظاہرے کیے ہیں۔

وزیر اعظم پوتن چار مارچ کو ہونے والے صدراتی انتخابات میں حصہ لیں گے اور ان کی فتح متوقع ہے۔

مظاہرے ولادی واسٹک سے شروع ہو کر روسی دارلحکومت ماسکو اور سینٹ پیٹرزبرگ میں اختتام پذیر ہوئے۔ مظاہرین نے پوتن کی تصاویر اٹھا رکھی تھیں اور ان کے حق میں نعرے بازی کر رہے تھے۔

حالیہ پارلیمانی انتخابات میں دھاندلیوں کے خلاف بڑے پیمانے پر مظاہروں کو منظم کرنے والے حزبِ مخالف کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ حکومت کی حامی ٹریڈ یونینوں نے سنیچر کو ہونے والے مظاہروں کا انتظام کیا تھا۔

وزیرِاعظم پوتن کی حمایتی ریلیوں کا مقصد اس بات کو واضح کرنا تھا کہ وزیرِاعظم اس وقت بھی اکثریت کے حامل ہیں حالانکہ حال ہی میں ان کے بارہ سالہ دورِ حکومت کے سب سے بڑے حکومت مخالف مظاہرے ہوئے ہیں۔

اگر وزیرِاعظم پوتن آئندہ دو بار صدراتی انتخاب میں کامیاب ہوتے ہیں تو وہ سنہ دو ہزار چوبیس تک اقتدار میں رہ سکتے ہیں۔ اس سے پہلے وہ سنہ دو ہزار سے لے کر سنہ دو ہزار آٹھ تک روس کے صدر رہ چکے ہیں۔

تاہم حزبِ مخالف کا مؤقف ہے کہ ریاستی اہلکاروں کو دباؤ اور رشوت کے ذریعے وزیرِاعظم کےحق میں ہونے والی تقریبات میں شامل کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ پولیس ان تقریبات میں لوگوں کی تعداد بڑھا چڑھا کر بتا رہی ہے۔

اسی بارے میں