یمن:القاعدہ کے ٹھکانوں پر بمباری، متعدد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

اطلاعات کے مطابق جنوبی یمن میں القاعدہ کے شدت پسندوں پر کیے جانے والے ایک فضائی حملے کم از کم دس افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

حکام کے مطابق یمن کے دارالحکومت صنعا سے تقریباً ایک سو تیس کلومیٹر جنوب میں جمعہ کی رات گئے بیدا شہر کے قریب القاعدہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا۔

پولیس اور سکیورٹی فورسز کے ذرائع نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ اس کارروائی میں تیئیس شدت پسند ہلاک ہوئے۔

حکام کے مطابق یہ حملے یمنی طیاروں کے ذریعے کیے گئے تاہم کچھ مقامی شہریوں کے خیال میں اس کارروائی میں امریکی جہازوں نے حصہ لیا۔

قاہرہ میں موجود بی بی سی کے نامہ نگار جان لین کا کہنا ہے کہ امریکہ یمن میں القاعدہ کے ارکان کے خلاف ڈرون طیاروں کے ذریعے کارروائی کرتا رہتا ہے۔

دوسری جانب بیدا کے ایک رہائشی نے خبر رساں ادارے رائٹرز کو بتایا کہ جمعہ کو اے کیو اے پی سے تعلق رکھنے والے انصار الاشریا کے شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر حملہ کیا گیا۔

حکومتی ذرائع نے رائٹرز کو بتایا کہ جنگی طیاروں سے القاعدہ کے شدت پسندوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکہ یمن میں ڈرون طیاروں کے ذریعے کارروائی کرتا رہتا ہے۔

گزشتہ کئی ماہ سے جاری صدر علی عبداللہ صالح کے خلاف تحریک کی وجہ سے سکیورٹی حالات غیر مستحکم ہیں جس کا القائدہ کے مبینہ دہشت گرد فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

اسی بارے میں