’عوام افغانستان میں جنگ کا خاتمہ چاہتے ہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption برطانوی وزیراعظم کا جولائی سال دو ہزار دس میں وزیراعظم منتخب ہونے کے بعد یہ پہلا امریکی دورہ ہے

برطانیہ کے وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے اپنے امریکی دورے کے موقع پر کہا ہے کہ عوام افغانستان میں جنگ کا خاتمہ چاہتے ہیں۔

برطانوی وزیراعظم امریکہ کے تین روزہ دورے پر واشنگٹن پہنچے۔ وہ صدر براک اوباما سے افغانستان کے مسئلے پر بات چیت کریں گے۔

توقع ہے کہ دونوں رہنماء آئندہ سال افغانستان کی سکیورٹی فورسز کو جنگی کارروائیوں کی کمانڈ سونپ دینے پر متفق ہو جائیں گے جو کہ پہلے سے اعلان کردہ منصوبے سے ایک سال جلد ہے۔

تاہم امریکی صدر کہہ چکے ہیں کہ افعانستان سے انخلاء میں جلد بازی نہیں کی جائے گی۔

دورے کے دوران امریکی صدر اور برطانوی وزیراعظم کے مابین ہونے والی ملاقات میں افغانستان کا مسئلہ سرفہرست رہے گا اور اس کے علاوہ دیگر معاملات جیسا کہ شام کی صورتحال اور ایران پر بھی بات چیت ہو گی۔

برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون ایک ایسے وقت امریکہ کا دورہ کر رہے ہیں جب افغانستان میں امریکی فوجی کے ہاتھوں سولہ افغان شہریوں کی ہلاکت کے بعد وہاں صورتحال کشیدہ ہے۔

واشنگٹن آمد پر وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا ’میرے خیال میں عوام اینڈ گیم چاہتے ہیں، وہ جاننا چاہتے ہیں کہ ہماری فوج واپس گھر آ رہی ہے جو وہاں ایک طویل عرصے سے موجود ہے۔‘

انہوں نے کہا ’میں افغانستان سے جانے کی وضاحت ان معنوں میں کرنا چاہتا ہوں کہ یہاں امن کی نگہبانی یہ بین الاقوامی فوج کے بغیر خود کریں اور اسے دہشت گردوں کی جنت نہ بننے دیں۔‘

’اور یہ ہمارا ہدف ہونا چاہیے۔صاف دلی سے کہوں تو برطانوی عوام، ہمارے فوجی اور افغان حکومت جانتے ہیں کہ اس کا خاتمہ ہونے جا رہا ہے۔‘

انہوں نے مزید کہا’میں تسلیم کرتا ہوں کہ یہ ایک بہترین جمہوریت نہیں ہو گی اور وہاں ترقی کے حوالے سے بے پناہ مسائل ہونگے۔‘

توقع ہے کہ برطانوی اور امریکی فوج سال دو ہزار چودہ کے اختتام پر افغانستان سے نکل جائے گی۔

اس سے پہلے جب برطانوی وزیراعظم اور ان کی اہلیہ سمانتھا واشنگٹن کے نزدیک ائر فورس کے اینڈریو بیس پر پہنچے تو ان کا استقبال فوجی بینڈ اور گارڈ آف آنر سے کیا گیا۔

وزیراعظم کیمرن واشگٹن پہنچے کے بعد صدر اوباما کے ساتھ ائر فورس ون یعنی صدر کے زیر استعمال ہوائی جہاز پر ریاست اوہایو گئے جہاں وہ یونیورسٹی میں باسکٹ بال کا میچ دیکھیں گے۔

برطانوی وزیراعظم پہلے غیر ملکی رہنما ہیں جنھیں نے ائر فورس ون میں امریکی صدر کے ساتھ سفر کیا۔

شام کے مسئلہ پر ڈیوڈ کیمرون نے براک اوباما سے بات چیت کرنے سے پہلے اپنے ایک بیان میں کہا کہ وہ شام میں انقلاب کی بجائے اقتدار کی پرامن منتقلی دیکھنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ حمص سرکاری فوج کے حملوں کے باعث پیدا ہونے والی ہولناک صورتحال سے مضطرب ہیں۔

اسی بارے میں