مصر:اخوان المسلمین کا صدارتی امیدوار نامزد

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption خیرت الشاطر سابق صدر حسنیٰ مبارک کے اقتدار سے ہٹنے کے بعد گزشتہ سال بارہ سال کی اسیری کے بعد رہا ہوئے تھے۔

مصر میں رواں سال مئی میں ہونے والے صدارتی انتخابات کے لیے اخوان المسلمین نے اپنے نائب سربراہ خیرت الشاطر کو امیدوار نامزد کر دیا ہے۔

پارٹی کی طرف سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق، نائب سربراہ خیرت الشاطر اُس کے صدارتی امیدوار ہوں گے۔

اگرچہ عام انتخابات میں پارلیمانی اکثریت حاصل کرنے کے بعد اخوان المسلمین کا موقف رہا ہے کہ وہ مئی کے صدارتی انتخابات میں اپنا امیدوار کھڑا نہیں کرے گی تاکہ اقتدار پر اسلام پسندوں کے قبضے کا تاثر نہ پھیل سکے لیکن اب اخوان المسلمین بلا واسطہ صدارتی انتخابات لڑے گی۔

نامہ نگاروں کے مطابق، اخوان المسلمین کی طرف سے صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کے اعلان کے بعد برسرِ اقتدار فوجی کونسل اور سب سے بڑی پارلیمانی جماعت کے درمیان اختلافات بڑھنے کا خدشہ ہے۔

اخوان المسلمین کا کہنا ہے اس نے اپنا فیصلہ اس لیے واپس لیا تاکہ انقلاب کے ثمرات اور فوج کی حکومت سے علیحدگی کو یقینی بنایا جا سکے اور سابق حکومت کے حصے دار رہنے والے صدارتی امیدوار فائدہ نہ اٹھا سکیں۔

واضح رہے کہ خیرت الشاطر سابق صدر حسنیٰ مبارک کے اقتدار سے ہٹنے کے بعد گزشتہ سال بارہ سال کی اسیری کے بعد رہا ہوئے تھے۔ مصر میں چونکہ اخوان مسلمین ایک کلعدم جماعت تھی اس لیے خیرت الشاطر کو جماعت کے ساتھ تعلقات رکھنے کی بنا پر قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

اسی بارے میں