صدر زرداری انڈیا کا دورہ منسوخ کریں

دینی جماعتوں اور تنظیموں پر مشتمل دفاع پاکستان کونسل نے صدر مملکت آصف علی زرداری مطالبہ کیا ہے کہ بھارتی دباؤ پر امریکہ نے جماعت الدعوۃ کے امیر حافظ سعید کے سر کی قیمت مقرر کی ہے اس لیے صدر آصف علی زرداری بھارت کا دورہ منسوخ کریں۔

مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران دفاع پاکستان کونسل کے رہنما علامہ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ صدر پاکستان کو چاہیے کہ وہ بھارت کا دورہ منسوخ کردیں اور بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ کےکھانے میں شرکت نہ کریں۔

صدر پاکستان آصف علی زرداری آٹھ اپریل کو بھارت جا رہے ہیں جہاں وہ بھارتی وزیر اعظم کی طرف سے دئیےگئے ظہرانے میں شرکت کریں گے۔

علامہ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ بھارت نے اپنے ہاکی کھلاڑیوں پر پاکستان آنے سے روک دیا جبکہ صدر آصف علی زرداری بھارتی وزیر اعظم سے کھانا کھانے جا رہے ہیں۔

نامہ نگار عبادالحق کے مطابق دفاع پاکستان کونسل کے رہنماؤں نے کہا کہ پاکستانی حکومت کی یہ ذمہ داری ہے وہ حافظ سعید کے معاملے پر امریکہ سے دو ٹوک انداز میں بات کریں اور امریکہ کو یہ پیغام دیا جائے کہ وہ پاکستان کے اندورانی معاملات میں مداخلت کرنا چھوڑ دے۔

جماعت اسلامی کے رہنماء فرید پراچہ نے کہا کہ کسی کے سر کی قمیت مقرر کرنا غیر انسانی اور غیر قانونی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دینا میں کہیں بھی بغیر کسی عدالت اور کسی کو صفائی کا موقع دیئے بغیر اس کی سر کی قیمت لگانا غیر قانونی ہے۔

دفاع پاکستان کونسل کے رہنماؤں نے کہا کہ حافظ سعید کے سر کی قیمت مقرر کرنا پاکستان کے اندروانی معاملات میں کھلی مداخلت ہے اور یہ قیمت ایک ایسے وقت میں لگائی گئی ہے جب پاکستانی پارلیمان میں نیٹو سپلائی لائن کی بحالی کے معاملے پر غور کر رہی ہے۔

انہوں نے حافظ سعید کے بارے میں امریکی اعلان پر پاکستانی دفتر خارجہ کو سراہا اور کہا کہ حکومت اپنے موقف پر قائم رہے اور کسی قسم کے بیرونی دباؤ کا شکار نہ ہو۔

ایک سوال کے جواب میں دفاع کونسل کے رہنما طاہر محمود اشرفی نے بتایا کہ حافظ سیعد کے سر کی قیمیت مقرر کرنے کے معاملے پاکستانی عدالتوں سے بھی رجوع کیا جائے گا اور عدالت سے یہ استدعا کی جائے گی کہ حکومت کو پابند کرے وہ حافظ سعید کو امریکہ سے تحفظ فراہم کرے۔

کونسل کے رہنما امیر حمزہ نے بتایا کہ کونسل اس معاملے پر عالمی عدالت انصاف سے رجوع کرنے کے بارے میں غور کیا جا رہا ہے اور اس ضمن میں قانونی ماہرین سے مشاورت کی جائے گی۔

دفاع پاکستان کونسل کے رہنماؤں نے بتایا کہ امریکی اعلان کے خلاف چھ اپریل کو پورے ملک میں یوم احتجاج منایا جائے گا اور احتجاجی مظاہروں کے ساتھ ساتھ ریلیاں بھی نکالی جائیں گی۔