دنیا کا معمر ترین ’ستانوے سالہ گریجویٹ‘

Allan Stewart تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

آسٹریلیا کے ایک شخص نے ’معمر ترین گریجویٹ‘ ہونے کا اپنا ہی ریکارڈ توڑتے ہوئے ستانوے برس کی عمر میں ایک اور ڈگری حاصل کر لی ہے۔

ایلن سٹیورٹ اکانوے برس کی عمر میں سنہ دو ہزار چھ میں قانون کی ڈگری حاصل کرکے گینز ورلڈ ریکارڈ میں شامل ہوئے۔

اس کے بعد وہ آسٹریلیا کی ساؤتھرن کراس یونیورسٹی سے کلینیکل سائنس کی تعیلم حاصل کرنے لگے۔

ایلن سٹیورٹ نے انیس سو چھتیس میں دندان سازی کی ڈگری حاصل کی اس کے بعد انہوں نے مجموعی طور پر چار ڈگریاں حاصل کی ہیں۔

وہ اسّی برس کی عمر میں خود کو ذہنی طور پر مصروف رکھنے کے لیے دوبارہ سکول جانے لگے۔

سٹیورٹ انیس سو پندرہ میں پیدا ہوئے۔ ان کے چھ بچے، بارہ پوتے پوتیاں اور چھ پڑ پوتے، پڑپوتیاں ہیں۔

انہوں نے دانتوں کے ڈاکٹر کے طور پر کام کیا اس کے بعد انہوں نے دانتوں کی جراحی کی ڈگری حاصل کی۔

انہوں نے تیسری ڈگری قانون کی حاصل کی۔ یہ ڈگری عمومی طور پر چھ برس کی ہوتی ہے تاہم انہوں نے اسے پانچ برس میں مکمل کیا۔

گریجویشن کی تقریب سے قبل خبر رساں ادارے اے ایف پی سے پات کرتے ہوئے ایلن سٹیورٹ نے کہا کہ ’میرا خیال ہے کہ اس ڈگری کے بعد میں اپنے تعلیمی سلسلے کو روک دوں گا۔ حالانکہ میں نے پچھلی ڈگری کے بعد بھی یہی کہا تھا اور پھر میں اکتانے لگا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ لوگ کبھی اتنے بوڑھے نہیں ہوتے کہ وہ تعلیم نہ حاصل کر سکیں۔

’دماغ کو وسعت دینے کے لیے کبھی دیر نہیں ہوتی۔ زندگی میں کچھ بامقصد حاصل کرنے کے لیے اپنے لیے نئے دوست اور چیلنجز بنائیں۔‘

اسی بارے میں