شام: اقوام متحدہ کے معائنہ کار حفا میں دوبارہ داخل

نشانہ بننے والے اقوام متحدہ کی گیک گاڑی تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption منگل کو حملے کا نشانہ بننے والے اقوام متحدہ کی گیک گاڑی

اقوامِ متحدہ کے معائنہ کار شام کے مغربی علاقے حفا میں دوبارہ داخل ہوگئے ہیں۔

واضح رہے کہ منگل کو اقوامِ متحدہ کے معائنہ کاروں پر حفا میں داخل ہونے کی کوشش کے دوران فائرنگ کی گئی تھی جس کے بعد انہیں واپس لوٹنا پڑا تھا۔

خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق اقوام متحدہ کی ترجمان سوزان گھوشیہ کا کہنا ہے کہ معائنہ کاروں کا ایک قافلہ حفا پہنچ گیا ہے۔

رائٹرز کے ایک فوٹوگرافر کا، جو ان معائنہ کاروں کے ہمراہ ہیں، کہنا ہے کہ شہر تقریباً ویران ہے جہاں عمراتیں نظر آتش کی گئی ہیں۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون کا کہنا ہے کہ قتل عام کے خطرے کے پیش نظر معائنہ کاروں کا حفا پہنچنا بہت ضروری تھا۔

رائٹرز کے فوٹوگرافر کا کہنا ہے کہ شہر میں شدید بمباری کے آثار نظر آتے ہیں۔

نظر آتش کی گئی بعض عمارتیں سرکاری دفاتر تھے۔ فوٹوگرافر کے مطابق کم از کم ایک لاش سڑک پر دیکھی گئی ہے۔

ملک کے دوسرے حصوں میں قتل عام کے پیش نظر امریکہ نے شام کی حکومت کے حفا میں کیے گئے اقدامات پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

اس سے قبل شام کے لیے اقوام متحدہ کے ایلچی کوفی عنان کا کہنا تھا کے ایسے شواہد ملے ہیں کے شہریوں کی ایک بڑی تعداد حفا میں پھنسی ہوئی ہے۔

اسی بارے میں