سعودی عرب: شہزادہ سلمان نئے ولی عہد مقرر

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption شہزادہ سلمان کو قدرے آزاد خیال تصور کیا جا رہا ہے۔

سعودی عرب کے اٹھاسی سالہ فرماں روا شاہ عبداللہ نے ملک کے وزیرِ دفاع اور اپنے سوتیلے بھائی شہزادہ سلمان کو نیا ولی عہد مقرر کر دیا ہے۔

ان کا تقرر شہزادہ نائف کی جگہ کیا گیا ہے جو سنیچر کو سوئس شہر جینیوا میں زیرِ علاج رہنے کے بعد انتقال کر گئے تھے۔

چھہتر سالہ شہزادہ سلمان بن عبد العزیز السعود کی تقرری کا اعلان پیر کو ریاستی ٹی وی پر ایک شاہی اعلان میں کیا گیا۔

نئے ولی عہد اس وقت ملک کے وزیرِ دفاع اور کئی سالوں سے دارالحکومت ریاض کے گورنر بھی ہیں۔

انہیں شہزادہ نائف کے مقابلے میں نسبتاً آزاد خیال سمجھا جاتا ہے جنہیں شاہ عبد اللہ سے بھی زیادہ قدامت پسند سمجھا جاتا تھا۔ شہزادہ نائف کے بارے میں تاثر تھا کہ وہ ذاتی طور پر سخت مذہبی روایات کے تسلسل کے حق میں تھے۔

شہزادہ سلمان اب نائب وزیرِاعظم بھی ہوں گے۔ سعودی عرب میں وزیراعظم کا عہدہ فرما رواں شاہ عبداللہ کے پاس ہے۔

ریاستی ٹی وی کے مطابق شہزادہ احمد مرحوم شہزادہ نائف کی جگہ وزیرِ داخلہ ہوں گے۔

اسی بارے میں