لندن: دہشتگردی کے شبہہ میں چھ گرفتار

لندن فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption لندن کے مغربی، شمالی اور مشرقی علاقوں میں متعدد گھروں

برطانوی انٹیلیجنس ادارے ایم آئی فائیو کی تحقیقات کے دوران لندن میں دہشتگردی کے شبہہ میں ایک خاتون سمیت چھ لوگوں کو گرفتار کر لیا ہے۔گرفتار ہونے والوں کی عمر اٹھارہ سے تیس برس کے درمیان ہے جن میں تین بھائی ہیں اور ایک شادی شدہ جوڑا ہے۔

لندن کے مغربی، شمالی اور مشرقی علاقوں میں متعدد گھروں اور ایک کاروبار کی تلاشی لی جا رہی ہے۔

خیال ہے کہ ان گرفتاریوں کا تعلق مبینہ سازش سے ہے جس میں اسلامی شدت پسند برطانیہ میں حملے کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

گرفتار ہونے والوں میں سے ایک کا تعلق نیو ہیم سے ہے جو پولیس کے سابق کمیونٹی سپورٹ افسر تھے۔

میٹرو پولٹن پولیس کا کہنا ہے کہ ان گرفتاریوں کا اولمپکس یا پیرا اولمپکس سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

بی بی سی کے وزارتِ داخلہ کے امور کے نامہ نگار ڈینی شا کا کہنا ہے کہ سکیورٹی ذرائع ان گرفتاریوں کو ’اہم‘ قرار دے رہے ہیں تاہم ابھی کسی طرح کے حملے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

خیال ہے کہ پولیس کافی عرصے سے تحقیقات کر رہی تھی اور جمعرات کو اس سلسلے میں گرفتاریاں کی گئیں۔

نامہ نگار کے مطابق ان میں سے کچھ لوگوں کو جو کہ برطانوی شہری ہیں دہشتگردی کی منصوبہ بندی اور دہشتگری کی ترغیب دینے کے شبہہ میں گرفتار کیا گیا ہے۔

ان تمام لوگوں کو جنوب مشرقی لندن کے ایک پولیس سٹیشن لیجایاگیا ہے۔

اسی بارے میں