طالبان کے ہاتھوں خاتون کے قتل کی ویڈیو

افغانستان طالبان تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption اطلاعات کے مطابق ہلاکت سے پہلے خاتون کو ایزائیں دی گئيں

افغانستان میں منظرِ عام پر آنے والی ایک ویڈیو میں افغان طالبان کو ایک عورت کو قتل کرتے دکھایا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق اس خاتون کو ’بدکاری‘ کے الزام میں یہ سزا دی گئی ہے۔

طالبان کے ہاتھوں ہلاکت کی اس مختصر ویڈیو میں متاثرہ خاتون کا سر ڈھکا ہوا ہے اور وہ زمین پر بیٹھی ہوئی ہے تبھی ایک شخص اسے گولی مارتا ہے اور دوسرے ہی لمحے وہ زمین پر بے دم پڑی دکھائی گئی ہے۔

ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ تقریباً سو سے زائد افراد وہاں موجود ہیں اور خاتون کی ہلاکت پر وہاں موجود بعض افراد تالیاں بھی بجاتے ہیں۔

پروان صوبے میں حکام کا کہنا ہے کہ ہلاکت کا یہ ویڈیو ایک ہفتے پہلے بنایا گیا تھا۔

پروان صوبے کے گورنر عبدالباصر سالانگی کا کہنا ہے متاثرہ خاتون کو ہلاک کرنے سے پہلے اذیتیں دی گئی تھیں۔

عبدالباصر سالانگی کا کہنا تھا ’پہلے طالبان نے اس خاتون کو ایزائیں دی اور پھر ہلاک کر دیا۔ اس ہلاکت کی وجہ دو طالبان کمانڈروں کے درمیان بدکاری کے معاملے پر جھگڑا بتایا جاتا ہے ‘۔

گورنر سالانگی نے طالبان کی جانب سے خواتین کے تئیں رویہ پر غصہ کا اظہار کیا ہے۔

افغانستان میں خواتین کے حقوق کے لیے کام کرنے والی سماجی کارکن اور قانون ساز فوزیہ کوفی نے اس واقعہ پر افسوس ظاہر کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس طرح کے کارناموں اور اس پر حکومت کی خاموشی ناقابل قبول ہے۔