شمالی کوریا کی معیشت کے حجم میں اضافہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گزشتہ چھ سالوں میں یہ دوسری بار ہے کہ شمالی کوریا کی معیشت بہتر ہوئی ہے

جنوبی کوریا کی جاری کردہ ایک سرکاری رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سنہ دو ہزار گیارہ میں شمالی کوریا کی معیشت کے حجم میں صفر اعشاریہ آٹھ فیصد اضافہ ہوا ہے۔

’دی بینک آف کوریا‘ کے اندازے کے مطابق شمالی کوریا کی معیشت کے حجم میں سنہ دو ہزار دس میں صفر اعشاریہ پانچ فیصد کمی آئی جبکہ دو ہزار گیارہ میں اس میں بہتری آئی۔

رپورٹ میں اس بہتری کی وجہ تعمیراتی کام میں اضافہ اور زراعت کے شعبے میں حالات کا بہتر ہونا بتایا گیا ہے۔

گزشتہ چھ سالوں میں یہ دوسری مرتبہ ہے کہ شمالی کوریا کی معیشت کا حجم بڑھا ہے۔

یاد رہے کہ شمالی کوریا قدرتی آفات اور بین الاقوامی پابندیوں کے باعث دنیا کے غریب ترین ممالک میں سے ایک ہے۔

جنوبی کوریا کے مرکزی بینک کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بہتر موسمی حالات اور کھاد کے اضافی استعمال کی وجہ سے جنگلات کی صنعت میں پانچ اعشاریہ تین فیصد اضافہ ہوا ہے۔

ادھر ملک کے بانی کم ال سنگ کی سویں سالگرہ کے موقع پر دارالحکومت میں ایک لاکھ نئے مکانات کی تعمیر کے بعد تعمیراتی صنعت میں چار فیصد اضافہ ہوا۔

شمالی کوریا کی معیشت عالمی مارکیٹ سے غیر منسلک ہے اور اس کے بارے میں اعداد و شمار جاری نہیں کیے جاتے۔ جنوبی کوریا سالانہ اندازے نجی اداروں اور ماہرین سے ملنے والی معلومات کی بنا پر بناتا ہے۔

اسی بارے میں