خلیج فارس، امریکی بحری جہاز کی فائرنگ

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ AFP

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ متحدہ عرب امارات کی ساحلی پٹی کے قریب امریکی بحری جہاز نے ایک کشتی پر فائرنگ کی ہے۔

امریکہ کے ایک اعلٰی دفاعی اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ امریکی بحری جہاز یو ایس این ایس راپا ہینک نے ایک کشتی پر اس وقت فائرنگ کی جب متعدد بار وراننگ دیے جانے کے باوجود وہ امریکی بحری جہاز کی جانب تیزی سے بڑھ رہی تھی۔

بحرین میں امریکی نیوی کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق دبئی کے نزدیک بحری جہازوں کو تیل سپلائی کرنے والے جہاز پر موجود عملے نے اس وقت ایک چھوٹی موٹر بوٹ پر فائرنگ کی جب متعدد بار وراننگ دیے جانے کے باوجود وہ جہاز کی جانب بڑھ رہی تھی۔‘

امریکی نیوی کے بیان کے مطابق’ نیوی کے حفاظتی اقدامات کے تحت مہلک ہتھیاروں کے استعمال سے پہلے موٹر بوٹ کو غیر مہلک ہتھیاروں سے خبردار کیا گیا۔

ابھی تک اس واقعہ میں ہلاکتوں کے کوئی تصدیق نہیں ہو سکی اگرچہ امریکی خبر رساں ایجنسی اے پی کے مطابق اس واقعہ میں ایک شخص ہلاک اور تین زخمی ہو ئے ہیں۔

متحدہ عرب امارات کے ایک اہلکار کے مطابق اس واقعہ میں ایک بھارتی ماہی گیر ہلاک اور تین زخمی ہو گئے ہیں۔

امریکی نیوی کا کہنا ہے کہ وہ اس واقعے کی تحقیقات کر رہی ہے۔

خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق کشتی کو دبئی کے قریب ماہی گیروں کے زیراستعمال ایک چھوٹی بندرگاہ پر لنگر انداز کیا گیا ہے اور بڑی تعداد میں حکام اور پولیس اہلکاروں کشتی کا جائزہ لے رہے ہیں۔

خیال رہے کہ ایران کی جانب سے حال ہی میں آبنائے ہرمز کو بند کرنے کی دھمکیوں کے بعد علاقے میں کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے۔

اسی بارے میں