امریکی سینما میں فائرنگ، بارہ ہلاک، پرچم سر نگوں

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

امریکی ریاست کولوراڈو کے شہر آرورا کے ایک سینما گھر میں فائرنگ میں بارہ افراد کی ہلاکت کے بعد ملک کے صدر براک اوباما نے تمام سرکاری عمارات پر امریکی پرچم سرنگوں کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ متعد افراد کو زخمی حالت میں مختلف ہسپتالوں میں پہنچا دیا گیا ہے۔

زخمیوں میں چار ماہ اور چھ سال کے دو بچے بھی شامل تھے۔چار ماہ کے بچے کو ضروری علاج کے بعد گھر بھیج دیا گیا ہے۔

صدر اوباما اور آئندہ انتخاب میں ان کے حریف مِٹ رومنی نے اپنی انتخابی سرگرمیاں بھی معطل کر دی ہیں۔ جس وقت فائرنگ کا واقعہ پیش آیا لوگ ریاست کولوراڈو کے شہر آرورا کے اس سینما گھر میں نئی فلم ’بیٹمین‘ دیکھ رہے تھے۔

عینی شاہدوں کے مطابق گیس ماسک پہنے ہوئے ایک شخص نے ہال میں آنسو گیس پھینکنے کے بعد فائرنگ شروع کر دی۔ پولیس نے اس سلسلے میں نیوروسائنس کے ایک چوبیس سالہ طالب علم کو سینما گھر کے باہر کار پارک سے پکڑ لیا ہے۔

حکام نے بتایا کہ طالب علم کے پاس ایک رائفل، ایک شاٹ گن اور دو پستول تھے۔ایف بی آئی کے ذرائع نے مسلح شخص کا نام جیز ہومز بتایا ہے۔

پولیس نے بتایا کہ ہومز یونیورسٹی آف کولوراڈو ڈینور میں زیر تعلیم تھا اور پی ایچ ڈی کے پروگرام سے نکلنے کی خواہش ظاہر کر چکا تھا۔

صدر اوباما واقعے کی اطلاع ملتے ہی فلوریڈا میں اپنا دورہ مختصر کر کے فوراً دارالحکومت پہنچ گئے۔

نیو یارک کی پولیس کے کمشنر ریمنڈ کیلی نے، جنہیں اس مقدمے کی تفصیلات سے آگاہ کیا گیا ہے، بتایا کہ ملزم نے اپنا بال سرخ کیے ہوئے تھے اور اپنے آپ کو فلمی کردار بیٹمین کا سب سے مشہور حریف ’جوکر‘ کہہ رہا تھا۔

کولوراڈو کے واقعے کے بعد نیویارک کے ان تمام سینما گھروں میں جہاں بیٹمین دکھائی جا رہی تھی سکیورٹی سخت کر دی گئی اور پیرس میں اس فلم کی نمائش منسوخ کر دی گئی ہے۔

کولوراڈو میں ایک عینی شاہد نے بتایا کہ مسلح شخص آہستہ آہستہ سیڑھیاں چڑھ رہا تھا اور لوگوں کو نشانہ بناتا جا رہا تھا۔ فائرنگ شروع ہوتے ہی ہال میں لوگوں نے بھاگنا شروع کر دیا۔ بہت سے لوگ فلم کے مختلف کرداروں کے لباس پہنچ کر آئے تھے۔

انیس سالہ سلینا جارڈن نے بتایا کہ انہوں نے ایک لڑکی کے گال میں گولی لگی دیکھی اور ایک نو سالہ لڑکی کو شاید پیٹ میں گولی لگی تھی۔

صدر اوباما کو جب اس واقعے کی اطلاع ملی تو وہ انتخابی ریلی سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ سیاست کرنے کے لیے اور بہت سے دن آئیں گے یہ دن دعا اور غور و خوض کا ہے۔

اسی بارے میں