بنگلہ دیش:مسجد پر بجلی گرنے سے تیرہ نمازی ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ہلاک ہونے والے چند افراد کے جسم اور چہرے جل گئے

بنگلہ دیش میں پولیس کا کہنا ہے کہ جمعے کی شب ملک کے ایک شمالی مشرقی گاؤں میں ایک مسجد پر بجلی گرنے سے کم از کم تیرہ افراد ہلاک اور پندرہ زخمی ہوگئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق دارالحکومت ڈھاکہ سے دو سو کلومیٹر دور سراسوتی پور نامی گاؤں میں عابدین نے رمضان کی خصوصی نمازیں ابھی مکمل ہی کیں تھیں کہ ٹین سے بنی اس عارضی عمارت پر بجلی گرگئی۔

عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ ایسا معلوم ہوا کہ بجلی گرنے سے مسجد کی مکمل عمارت میں بجلی دوڑ گئی اور مسجد کے امام بھی ہلاک ہونے والوں میں شامل تھے۔

مقامی کونسل کے ایک رکن ابو کلام نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ مسجد کی چھت پر لگا مائیکرو فون گاڑی کی بیٹری سے چلایا جا رہا تھا۔

مقامی پولیس کے سربراہ بیز عالم نے بتایا کہ مسجد میں ماہِ رمضان میں ہونے والی خصوصی نمازِ تراویح ادا کی جا رہی تھی۔

انہوں نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے تیرہ افراد جن میں مسجد کے امام بھی شامل تھے، موقع پر ہی ہلاک ہو گئے۔ ان کے مطابق ہلاک ہونے والے چند افراد کے جسم اور چہرے جل گئے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ زخمی ہونے والوں میں سے چھ افراد کو ہسپتال داخل کروایا گیا ہے۔

گاؤں کے رہائشیوں نے اس عارضی عمارت کو مسجد اس وجہ سے بنا رکھا تھا کیونکہ بارشوں کی وجہ سے گاؤں کی سیمنٹ سے بنی مسجد جانا مشکل ہو رہا تھا۔

کونسل کے رکن ابو کلام نے بتایا کہ ’یہ ایک خوفناک منظر تھا۔ درجنوں لوگ زمین پر پڑے تھے، کچھ ہلاک ہو چکے تھے اور کچھ تکلیف میں تڑپ رہے تھے۔ بیشتر نوجوان مرد تھے‘۔

’ہم زخمیوں کو لے کر تین کشتیوں میں دھرمپاسہ کے ہسپتال روانہ ہوگئے مگر ہمیں وہاں پہنچنے میں کئی گھنٹے لگ گئے‘۔

بجلی کا گرنا بنگلہ دیش کے سونامگانگ ضلع میں ایک بڑا مسئلہ ہے۔ بجلی گرنے کے بیشتر واقعات مون سون کا موسم کے دوران جون سے ستمبر کے مہینوں میں بھاری بارشوں کے وقت پیش آتے ہیں۔

بنگلہ دیش میں ہر سال سینکڑوں افراد بجلی گرنے سے ہلاک ہو جاتے ہیں جن میں سے اکثر اپنی چاول کی فصلوں کو سیلاب سے بچانے کی کوشش کر رہے ہوتے ہیں۔

بنگلہ دیش میں ماہرینِ ماحولیات کا کہنا ہے کہ عالمی سطح پر موسمی تبدیلی بڑھتے ہوئے طوفانوں کی وجہ ہے جن میں گزشتہ کئی سالوں میں اضافہ دیکھنے کو ملا ہے۔

گزشتہ سال مئی کے مہینے میں ایک ہی دن میں مختلف اضلع میں بجلی گرنے کے واقعات میں انتیس افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

اسی بارے میں