جنوبی افریقہ: کانکن ہلاکتوں پر تعزیتی تقریب

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 23 اگست 2012 ,‭ 06:03 GMT 11:03 PST

جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوما نے ماریکانہ کان میں ہلاکتوں پر ایک ہفتے کا سوگ منانے کا اعلان کیا تھا

جنوبی افریقہ میں گزشتہ ہفتے ماریکانہ کان میں پولیس اور ہڑتالی کان کنوں کے درمیان جھڑپ میں چونتیس افراد کی ہلاکت کی یاد میں ایک تعزیتی تقریب منعقد کی جا رہی ہے۔

یہ تعزیتی تقریب ماریکانہ کان کے قریب واقع ایک سٹیڈیم کے قریب ہو رہی ہے۔

اس تقریب میں جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوم کے دفتر کے سربراہ کولنز بھی شرکت کر رہے ہیں۔

اس سے پہلے جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوم نے بدھ کو ماریکانہ کان کا دورہ کیا۔

صدر جیکب زوما نےماریکانہ کے دورے پر کا کن کنوں کو یقین دلایا کہ کان کنوں کی ہلاکت کے معاملے پر ہونے والی تحقیقات میں تیزی لائی جائے گی۔

نامہ نگاروں کے مطابق صدر جیکب زوما جب ماریکانہ کان پہنچے تو ہڑتالی کان کنوں نے انکا سرد مہری سے استقبال کیا۔

اس موقع پر کن کنوں نے پولیس کے خلاف نعرہ بازی بھی کی۔

واضح رہے کہ لونمن کی ماریکانہ کان ملازمین کی ہڑتال کی وجہ گزشتہ دو ہفتوں سے بند ہے۔

ماریکانہ کے کان کن اپنی تنخواہ میں ہر ماہ ایک ہزار ڈالر کے اضافہ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

جنوبی افریقہ کے دارالحکومت جوہانسبرگ کے شمال مغرب میں واقع ماریکانہ کان میں پولیس کی فائرنگ سے کم سے کم چونتیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوما نے ماریکانہ کان میں ہلاکتوں پر ایک ہفتے کا سوگ منانے کا اعلان کیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔