سٹی گروپ کا شیئر ہولڈرز سےسمجھوتہ، انسٹھ کروڑ ڈالر کی ادائیگي

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 30 اگست 2012 ,‭ 11:31 GMT 16:31 PST
سٹی گروپ

سٹی گروپ کے شئر ہولڈرز نے نقصان کے لیے بینک کو ذمہ دار ٹہرایا تھا

امریکہ کے ایک بڑے بینک 'سٹی گروپ' نے سب پرائم یعنی غیر محفوظ قرضوں کے مقدمہ میں بینک کے شیئر ہولڈرز کو انسٹھ کروڑ ڈالر ادا کرکے سمجھوتہ کر لیا ہے۔

شیئر ہولڈرز یا بینک میں سرمایہ کاری کرنے والوں نے بینک کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا کہ بینک نے ان قرضوں سے متعلق حقائق کو ان سے خفیہ رکھا جن سے بینک کو زیادہ رِسک تھا۔

چار برس قبل شروع ہونے والی عالمی کساد بازاری کے تعلق سے بینک کی جانب سے سمجھوتے کے لیے ادا کی گئی رقموں میں سے یہ ایک بہت بڑی رقم ہے۔

بینک پر یہ الزام تھا کہ اس نے رسک والے جو قرض دیے تھے اس سے متعلق اس نے شیئر ہولڈرز کو صحیح معلومات فراہم نہیں کیں۔

بینک کے شیئر ہولڈرز نے کہا تھا کہ دو ہزار آٹھ میں بینک نے جو انکشافات کیے تھے وہ پوری طرح حقائق پر مبنی نہیں تھے اس لیے ان سب نے متفقہ طور پر عدالتی کارروائی کی تھی۔

سٹی بینک اس الزام کو مسترد کرتا رہا ہے لیکن اس کا کہنا ہے کہ اس مقدمہ پر مزید رقم خرچ کرنے سے بچنے کے لیے یہ مفاہمت سمجھوتہ کیا گیا ہے۔

بینک کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ رقم کی ادائيگي معاشی بحران سے اٹھنے والے مسائل کے حل میں ایک ’بہت اہم قدم ہے۔ سٹی بینک اس معاملے کو اب پیچھے چھوڑ کر آگے بڑھنا چاہتی ہے۔‘

بینک نے جو معاہدہ کیا ہے اس میں شیئر ہولڈرز کے ان پہلوؤں کو بھی مد نظر رکھا گيا ہے کہ انہیں بینک کے طرز عمل سے کافی نقصان پہنچا تھا۔

بینک کا کہنا ہے کہ اس نے قرضوں سے متعلق رسک کا از سر نو جائزہ لیا ہے اور اب بینک کے بنیادی نکات پر اس کی توجہ ہے۔

امریکہ میں اس سے پہلے دو ہزار دس میں بینک آ‌ف امریکہ نے بھی تقریباً ساٹھ کروڑ ڈالر کی رقم کی ادائیگي سے ایسا ہی ایک سمجھوتہ کیا تھا۔

گزشتہ برس ویلس فارگو نے بھی ایسی ہی معاملے میں تقریباً ساٹھ کروڑ ڈالر ادا کیے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔