برطانیہ:غربت کا شکار بچوں کی امداد کی اپیل

آخری وقت اشاعت:  بدھ 5 ستمبر 2012 ,‭ 09:45 GMT 14:45 PST

بچوں کے لیے کام کرنے والے بین الاقوامی امدادی ادارے سیو دا چلڈرن نے پہلی بار برطانیہ کے اندر بچوں میں بڑھتی ہوئی غربت سے نمٹنے کے لیے مالی امداد کی اپیل کی ہے۔

یہ ادارہ افریقہ میں غربت کے خاتمے کے لیے کوششوں کے حوالے سے جانا جاتا ہے۔

ادارے نے نچلے طبقے کے آٹھ سے سولہ برس کی عمر کے ڈیڑھ ہزار بچوں اور پانچ ہزار والدین سے سروے کیا جس سے یہ معلوم ہوا کہ برطانیہ میں پینتیس لاکھ بچے غربت میں زندگی گزار رہے ہیں اور آنے والے سالوں میں اس تعداد میں تیزی سے اضافے کا خدشہ ہے۔

سیو دا چلڈرن کا کہنا ہے کہ معاشی بدحالی اور مہنگائی نے کئی برطانوی خاندانوں کو غربت میں دھکیل دیا ہے۔

ادارے کے بقول برطانیہ میں کئی بچے بھوکے سکول جاتے ہیں اور ان کے پاس سخت سردی میں پہننے کے لیے گرم کپڑے اور سکول کے لیے جوتے بھی نہیں ہوتے۔

سیو دا چلڈرن نے برطانوی حکومت سے کہا ہے کہ وہ کم تنخوا دار افراد کے خاندانوں کے لیے فوائد پر توجہ دیں جبکہ ملازمتیں دینے والے ادارے ملازمین کو کم سے کم اتنی تنخواہ دیں کہ وہ گزارا کر سکیں۔

برطانوی حکومت نے کہا ہے کہ وہ بچوں میں غربت کے خاتمے کے لیے پرعزم ہے۔

ادارے نے برطانیہ میں سالانہ سترہ ہزار پاؤنڈ کمانے والے طبقے کو غربت کی فہرست میں شامل کیا ہے۔

سروے میں شامل نصف سے زائد والدین کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنی خوراک میں کمی کر دی ہے جبکہ چھبیس فیصد کے مطابق گزشتہ سال وہ کھانا چھوڑنے پر مجبور ہوئے۔

محکمۂ ورک اینڈ پینشن کی ترجمان کا کہنا ہے کہ’گزشتہ دس سال کے دوران فوائد اور ٹیکس کریڈٹس کی مد میں ایک سو پچاس ارب پاؤنڈ خرچ کرنے کے باوجود پچھلی حکومت بچوں میں غربت کے مسئلے سے نمٹنے میں ناکام رہی اور برطانیہ اس ضمن میں سال دو ہزار دس تک کے مقرر کردہ ہدف پورا نہیں کر سکا۔

انہوں نے کہا کہ’حکومت بچوں میں غربت کے خاتمے کے عزم پر قائم ہے لیکن ہم اس کو ایک نئے طریقے سے ختم کرنا چاہتے ہیں، جس میں کام نہ کرنا، تعلیم میں ناکامی اور خاندانی علیحدگی جسے بنیادی مسائل سے نمٹنا ہے۔‘

سیو دا چلڈرن نے بچوں میں بڑھتی ہوئی غربت سے نمٹنے کے لیے مالی امداد کی اپیل سے پانچ لاکھ پاؤنڈ جمع کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ اس رقم سے بچوں کے تعلیمی کیرئیر میں مدد اور ان کے خاندان کو کھانا پکانے کے برتن، فرنیچر اور کھلونے مہیا کیے جا سکیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔