’زمبابوے انتخابات اگلے برس ہوں گے‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 27 ستمبر 2012 ,‭ 12:18 GMT 17:18 PST

زمبابوے کے صدر رابرٹ موگابے اگلے برس مارچ میں انتخابات کروانا چاہتے ہیں۔

عدالتی دستاویزات سے انکشاف ہوا ہے کہ زمبابوے کے صدر رابرٹ موگابے مارچ دو ہزار تیرہ میں انتخابات کروانا چاہتے ہیں، جب کہ نومبر میں نئے آئین پر ریفرنڈم ہو گا۔

تحریک برائے جمہوری تبدیلی (ایم ڈی سی) نامی جماعت میں ان کے پرانے حریفوں نے اس نظام الاوقات کو ’غیرحقیقی‘ کہہ کر اس کی مذمت کی ہے۔

طرفین انتخابات سے قبل نافذ ہونے والے آئین کے مسودے پر متفق نہیں ہو سکے۔

صدر موگابے ہمیشہ اصرار کرتے رہے ہیں کہ انتخابات اسی برس منعقد ہونے چاہئیں۔

ایم ڈی سی کے سربراہ وزیرِ اعظم مورگن چوانگیرائی ہیں، جنھیں جنوبی افریقہ کے ثالثوں کی حمایت حاصل ہے۔ ان کا اصرار ہے کہ انتخابات سے قبل ہی نیا آئین تشکیل دے دیا جائے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ انتخابات آزادانہ و منصفانہ ہوں۔

صدر موگابے اس بات سے انکار کرتے رہے ہیں کہ گذشتہ انتخابات میں ان کے حق میں دھاندلی کی گئی تھی۔

چوانگیرائی دو ہزار آٹھ میں ہونے والے انتخابات سے الگ ہو گئے تھے، جس کی وجہ انھوں نے یہ بیان کی تھی کہ ان کے حامیوں پر فوج اور موگابے کے حامی مسلح دستوں نے منظم حملے کیے تھے۔

"انتخابات کی تاریخ خاص طور پر یک طرفہ ہے اور اس کی کوئی سائنسی اور قانونی بنیاد نہیں ہے۔"

ایم ڈی سی کے ترجمان

اس غیر یقینی صورتِ حال کی وجہ سے زمبابوے کی معیشت تیزی سے گر گئی تھی، جس پر موگابے اور چوانگیرائی مشترکہ حکومت بنانے پر رضامند ہو گئے تھے۔

صدر موگابے کے مجوزہ نئے انتخابات کا نظام الاوقات ایک عدالتی مقدمے کی دستاویزات میں شامل تھا۔ یہ مقدمہ اس بارے میں ہے کہ انتخابات کب منعقد کروائے جائیں گے۔

بی بی سی افریقہ کے نمائندے اینڈریو ہارڈنگ نے کہا ہے کہ یہ کسی بھی لحاظ سے زمبابوے کے انتخابات کی حتمی تاریخ نہیں ہے، لیکن اس سے بڑھتی ہوئی عجلت کا اندازہ ضرور لگایا جا سکتا ہے۔

تاہم ایم ڈی سی کے ترجمان ڈگلس موونزورا نے اس نظام الاوقات کو فوری طور پر مسترد کر دیا۔

انھوں نے خبررساں ادارے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے کہا ’انتخابات کی تاریخ خاص طور پر یک طرفہ ہے اور اس کی کوئی سائنسی اور قانونی بنیاد نہیں ہے۔‘

موگابے اور چوانگیرائی ان انتخابات میں مدِ مقابل ہوں گے جو اگلے سال منعقد ہونا ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔