آرٹ گیلری سے قیمتی فن پارے چوری

آخری وقت اشاعت:  منگل 16 اکتوبر 2012 ,‭ 18:50 GMT 23:50 PST
پکاسو کی تصویر

پکاسو دنیا کے عظیم ترین مصوروں میں شمار کیے جاتے ہیں۔

نیدرلینڈ کے شہر راٹرڈم کے میوزیم سے پکاسو، میتیسے، مونے، گاگین، اور فرائڈ جیسے معروف مصوروں کی پینٹنگ چوری ہو گئی ہے۔

نیدرلینڈ کی پولیس نے کہا ہے کہ چوری کی یہ واردات منگل کی صبح کنستھال میوزیم میں ہوئی جہاں ٹرائٹن فاؤنڈیشن کی بیسویں سالگرہ کے موقع پر ان فن پاروں کی نمائش کی جا رہی تھی۔

چوری ہونے والی تصاویر میں مونے کی ’واٹرلو برج‘، پکاسو کی ’ٹیٹے ڈی آرلے کوئن‘، میٹیسے کی ’لا لیسوسے‘ اور فرائڈ کی ’بند آنکھوں والی خاتون‘ اہم ہیں۔

چوری ہونے والی دیگر پینٹنگز میں مونے کی ’ کراس برج‘ اورگاگن کے کئی فن پارے شامل ہیں۔

میوزیم کی ترجمان پیٹریشیا ویسلز نے خبررساں ایجنسی اے ايف پی سے بات کرتے ہوئے کہا جب رات میں الارم بجا تو پولیس کو اطلاع دی گئی لیکن پولیس کے یہاں پہنچنے سے قبل چور میوزیم سے جا چکے تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ یہ چوری مقامی وقت کے مطابق صبح تین بجے ہوئی۔

بہترین نمونہ

"رنٹن فاؤنڈیشن آرٹ کے بہترین نمونوں کا مجموعہ ہے اور کنستھال نمائش میں ایک سو پچاس مشاہیر مصوروں کے ذریعے بنائی گئی تصویروں کی نمائش ہو رہی ہے ۔ ان مشاہیر میں پال سیزانے، سلواڈور ڈالی، رائے لیشنسٹین اور اینڈی وار ہول شامل ہیں"

پولیس کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ابتدائی تحقیقات سے اتنا پتہ تو ضرور چلتا ہے کہ یہ چوری انتہائی تیاری کے ساتھ کی گئی تھی‘۔

پولیس سی سی کیمرے سے ریکارڈ ویڈیو ٹیپ کو دیکھ رہی ہے اور اس نے ایسے عینی شاہدین کو سامنے آنے کے لیے کہا ہے جن سے اس معاملے میں کوئی پیش رفت مل سکے۔

میوزیم کے سربراہ ولیم وان ہیسل نے کہا ہے کہ منگل کو میوزیم بند رہے گا۔

ٹرنٹن فاؤنڈیشن آرٹ کے بہترین نمونوں کا مجموعہ ہے اور کنستھال نمائش میں ایک سو پچاس مشاہیر مصوروں کے ذریعے بنائی گئی تصویروں کی نمائش ہو رہی ہے ۔

ان مشاہیر میں پال سیزانے، سلواڈور ڈالی، رائے لیشنسٹین اور اینڈی وار ہول شامل ہیں۔

واضح رہے کہ کنستھال میوزیم کا مطلب ڈچ زبان میں آرٹ گیلری ہوتا ہے اور یہاں نمائش کے لیے جگہ ہے لیکن اس کا اپنا کوئی ذخیرہ نہیں ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔