بن غازی حملے کا ایک ملزم، قاہرہ میں ہلاک

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 25 اکتوبر 2012 ,‭ 07:00 GMT 12:00 PST

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کا سراغ لگا کر مدینۃ نصر کے علاقے میں پہنچا گیا تھا

مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں حکام کا کہنا ہے کہ گذشتہ ماہ لیبیا کے شہر بن غازی میں امریکی قونصل خانے پر ہونے والے حملے میں ملوث ایک ملزم کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔

اس شحص کی ہلاکت قاہرہ کے نواحی علاقے مدینۃ نصر میں پولیس اہلکاروں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے کے بعد ہوئی۔ حکام نے اس شخص کا نام صرف حاظم بتایا ہے۔

بن غازی میں امریکی قونصل خانے پر ہونے والے حملے میں امریکی سفیر سمیت چار سفارتی اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

مصری حکام کا کہنا ہے کہ ملزم کو مدینۃ نصر میں بدھ کی صبح ایک مکان میں گھیر لیا گیا تھا۔ ان کے مطابق ملزم نے سیکورٹی اہلکاروں پر ایک بم بھی پھینکا تاہم وہ گھر کے اندر ہی گر گیا۔

مقامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ اس موقع پر فائرنگ کئی گھنٹوں تک جاری رہی۔ حکام نے بتایا کہ بعد میں مکان میں سے ہتھیار، دھماکہ خیز مواد اور ملزم کی آتش زدہ لاش نکالی گئی۔

’الاحرام‘ نامی اخبار کا کہنا ہے کہ ہنگامی امدادی عملے کو علاقے کے دیگر رہائشیوں کو فائر برگیڈ کی مدد سے نکالنا پڑا۔

قاہرہ سے بی بی سی کے جان لین کا کہنا تھا کہ ایک امکان یہ ہو سکتا ہے کہ ملزم صحرائے سینا جانے کی کوشش کر رہا ہو جہاں پر خطے کے کئی شدت پسند پناہ لے رہے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔