شکاگو: براک اوباما نے ووٹ ڈال دیا

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 26 اکتوبر 2012 ,‭ 03:36 GMT 08:36 PST

عوامی جائزوں میں براک اوباما کو اپنے حریف پر دو سے تین فیصد کی برتری حاصل ہے

امریکہ کے صدارتی انتخاب میں ڈیموکریٹ پارٹی کے امیدوار اور موجودہ صدر براک اوباما نے ’ارلی ووٹنگ‘ یا الیکشن کے دن سے قبل ووٹنگ کے رجحان کو فروغ دینے کے لیے آبائی شہر شکاگو میں اپنا حقِ رائے دہی استعمال کیا ہے۔

براک اوباما اپنی انتخابی مہم کے دوران دو دن میں آٹھ امریکی ریاستوں کے دورے پر ہیں اور وہ قبلِ از وقت ووٹ کا حق استعمال کرنے والے پہلے امریکی صدر ہیں۔

امریکہ میں چھ نومبر کو صدارتی انتخاب ہو رہا ہے اور براک اوباما اور ان کے حریف مٹ رومنی کے درمیان کانٹے کے مقابلے کی توقع کی جا رہی ہے۔

سخت مقابلے کے امکانات کی وجہ سے ہی براک اوباما کی انتخابی مہم چلانے والی ٹیم ڈیموکریٹ ووٹرز پر زور دے رہی ہے کہ وہ قبل از وقت ووٹنگ کا حق استعمال کریں۔

انتخاب سے تیرہ دن قبل عوامی جائزوں میں براک اوباما کو اپنے حریف پر دو سے تین فیصد کی برتری حاصل ہے تاہم اے بی سی نیوز کے لیے لینگر ریسرچ ایسوسی ایٹس کے جائزے میں ملکی معیشت کے بارے میں باون فیصد ووٹر مٹ رومنی اور تینتالیس فیصد براک اوباما کے حامی نظر آئے۔

براک اوبام نے اپنا حقِ رائے دہی جمعرات کو استعمال کیا جبکہ ان کی اہلیہ مشیل اوباما پندرہ اکتوبر کو ووٹ ڈال چکی ہیں۔

ایک اندازے کے مطابق امریکہ میں بہّتر لاکھ افراد نے قبل از وقت ووٹنگ کا حق استعمال کیا ہے اور ووٹنگ کے دن سے قبل پینتیس فیصد ووٹ پہلے ہی ڈالے جا چکے ہوں گے۔

صدر اوباما کی انتخابی مہم کے دوران جمعرات کو یہ اعلان بھی کیا گیا کہ وہ ریاست میری لینڈ، واشنگٹن اور مین میں ہم جنس شادیوں کی اجازت دیے جانے کے حامی ہیں۔ ان تینوں ریاستوں میں اس معاملے پر نومبر میں ریفرنڈم ہو رہا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔