بوسنیا سے مکہ تک حج کرنے کے لیے پیدل سفر

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 27 اکتوبر 2012 ,‭ 13:51 GMT 18:51 PST

سناد ہاصق نے حج کرنے کے لیے اپنے بوسنیا سے مکہ تک پانچ ہزار چھ سو پچاس کلو میٹر پیدل سفر کیا۔

بوسنیا کے ایک سینتالیس سالہ مسلمان شخص سناد ہاصق نے حج کرنے کے لیے اپنے ملک سے مکہ تک پانچ ہزار چھ سو پچاس کلو میٹر پیدل سفر کیا ہے۔

اس سفر کے دوران انھیں جنگ زدہ ملک شام سے بھی گزرنا پڑا جس کے بارے میں ان کا کہنا ہے کہ اللہ نے انھیں حفظ و امان میں رکھا۔

سناد ہاصق نے بی بی سی کو بتایا کہ انھیں ویزا لینے کے لیے شام کی سرحد پر کئی گھنٹے رکنا پڑا۔

انھوں نے بتایا کہ جب ان کو ویزا ملا تو صدر بشارالاسد کے حامی ایک فوجی اہلکار نے انھیں کہا کہ اگر وہ شام سے زندہ نکلنے میں کامیاب ہوئے تو حج میں ان کے لیے بھی دعا کریں۔

سناد نے کہا کہ ان کو سرکاری اور باغیوں کے چیک پوسٹوں سے گزرنا پڑا۔

انھوں نے مزید بتایا کہ سفر دوران ان کے پاس قرآن اور بائیبل کے نسخے بھی تھے اور چیک پوسٹوں پر بعض اہلکاروں نے قرآن شریف کو چوما۔

بی بی سی کے ڈان ڈامن کے مطابق سناد ہاصق بوسنیا کے دارالحکومت سراجیو کے قریب ایک قصبے سے مکہ کے لیے پیدل روانہ ہوئے اور ان کے لیے پہلا مشکل مرحلہ پچھلے دسمبر بلغاریہ میں منفی پینتیس ڈگری سنٹی گریڈ کی سردی برداشت کرنا تھا۔

سناد کا کہنا تھا کہ ’ اگر مجھے اللہ پر بھروسا نہ ہوتا کہ وہ میری حفاظت کر رہا ہے تو میں مکہ تو دور کی بات بلغاریہ تک نہ پہنچ پاتا۔‘

انھوں نے بی بی سی کو بتایا کہ ’ میں نے بغیر پیسوں کے ایک بیگ لے کر سات ممالک اور دو صحراؤں سے گزر کر پانچ ہزار چھ سو پچاس کلو میٹر کا سفر طے کیا۔‘

سناد کا کہنا تھا کہ کوئی دن ایسا نہیں تھا جو مشکل نہ ہو لیکن اس کے ساتھ یہ سب کچھ دلچسپ بھی تھا۔

شام میں اپنے سفر کے بارے میں انھوں نے بتایا کہ ’کسی نے مجھ پر گولی نہیں چلائی۔ مجھے مسلح لوگوں نے روکا اور میرا پاس پورٹ چیک کیا لیکن جب میں نے انھیں بتایا کہ میں حج کے لیے جا رہا ہوں تو مجھے سرکاری اہلکاروں اور باغیوں، دونوں ہی نے جانے دیا۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔