آلودگی پر اثاثے منجمد کرنے کے خلاف اپیل

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 10 نومبر 2012 ,‭ 11:43 GMT 16:43 PST

کمپنی پر دریائے آمیزن میں زہریلا فضلہ ڈالنے کا الزام ہے

تیل کی معروف کمپنی شیورن نے ارجنٹائن میں اپنی دو کمپنیوں کے اثاثے منجمد کیے جانے کے خلاف ایکواڈور کی عدالت کے ذریعے اپیل کی ہے۔

ایکواڈور کے ایک جج نے ماحولیاتی نقصان کی تلافی کے لیے کمپنی کے تقریبًا انیس ارب ڈالر کے اثاثے منجمد کرنے کا حکم دیا ہے۔

عدالت نے کمپنی سے ایمیزون کے علاقے کو آلودہ کرنے پر انیس ارب ڈالر ادا کرنے کے لیے کہا ہے لیکن چونکہ ایکواڈور میں شیورن کے اثا ثے بہت کم ہیں اس لیے درخواست گزاروں کا مطالبہ ہے کہ اس فیصلے کو بیرون ملک بھی نافذ کیا جائے۔

شیورن کا کہنا ہے کہ اس کی ذیلی کمپنیوں کا اس فیصلے سے کوئی تعلق نہیں۔ کمپنی کے ترجمان کینٹ روبرسٹن نے کہا ’شیورن کارپوریشن کے ارجنٹائن میں کوئی اثاثہ نہیں ہے‘۔

ان کا کہنا تھا '' ارجینٹینا میں جو بھی آپریشن ہے اسے ذیلی کمپنیاں انجام دیتی ہیں اور ان کا ایکواڈور میں ہوئے جعلی فیصلے سے کچھ بھی لینا دینا نہیں ہے۔''

"شیورن کارپوریشن، جو اس فیصلے سے قرض کی ذمہ دار ہے، کی ارجینٹینا میں کوئی اثاثہ نہیں ہے۔ ارجینٹینا میں جو بھی آپریشن ہے اسے ذیلی کمپنیاں انجام دیتی ہیں اور ان کا ایکواڈور میں ہوئے جعلی فیصلے سے کچھ بھی لینا دینا نہیں ہے۔"

کمپنی کے ترجمان

بدھ کو یہ فیصلہ ایکواڈور میں لاگو ایگریو کے لوگوں اور شیورن کمپنی کے درمیان تقریبًا ایک عشرے تک چلنے والی طویل قانونی لڑائی کے بعد آيا ہے۔

عدالت فیصلے میں ماحولیاتی آلودگي پھیلانے پر اصل میں تقریبًا ساڑھے آٹھ ارب ڈالر کا جرمانہ عائد کیا تھا لیکن چونکہ کمپنی نے اس کے لیے عوام سے معافی نہیں مانگی اس لیے اسے دوگنے سے بھی زیادہ کر دیا گیا۔

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ ٹیکساکو، جس کادو ہزار ایک میں شیورن کے ساتھ انضمام ہوا تھا، سنہ انیس سو چونسٹھ سے انیس بانوے تک اپنا زہریلا فضلہ ایکوڈور کے دریائے ایمیزون میں پھینکا تھا۔

لیکن شیورن کا کہنا ہے کہ ٹیکساکو نے سنہ نوے کے درمیان اس کی صفائی پر تقریبًا چالیس ملین ڈالر خرچ کیے تھے اور اس کے بعد حکومت کے ساتھ اس نے ایک معاہدہ بھی کیا تھا کہ اس بارے میں اس پر مستقبل میں کوئي ذمہ داری عائد نہیں کی جائیگی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔