جرمنی: فیکٹری میں آگ سے چودہ ہلاک

آخری وقت اشاعت:  پير 26 نومبر 2012 ,‭ 18:38 GMT 23:38 PST

آگ لگنے کے وقت اس فیکٹری میں پچاس کے قریب افراد موجود تھے۔

جرمنی میں ایک معذور افراد کی فیکٹری میں لگنے والی آگ کے نتیجے میں چودہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

جنوب مغربی جرمنی میں بلیک فارسٹ کے علاقے میں واقع شہر نوئے شٹاٹ میں آگ بجھانے والا عملہ جلنے والی عمارت سے متاثرین کو نکالنے میں مصروف ہے۔

یہ فیکٹری ایک خیراتی ادارے ’کاریٹس‘ کے زیر اہتمام کام کرتی تھی۔

بتایا جاتا ہے کہ فیکٹری میں ایک سو بیس کے لگ بھگ افراد کام کرتے ہیں اور اس آگ کے لگنے کی کوئی وجہ معلوم نہیں ہو سکی۔

مقامی میڈیا پر چلنے والی خبروں میں گودام میں دھماکوں کا زکر کیا جارہا ہے۔

اس مرکز میں لکڑی اور دھات پر کام کیا جاتا ہے لیکن یہ واضح نہیں ہے کہ اس فیکٹری میں کوئی آتش گیر مادہ موجود ہوتا ہے یا نہیں۔

بتایا جاتا ہے کہ آگ مقامی جرمن وقت کے مطابق ایک بجے لگی اور چھت سے شعلے جلد ہی نظر آنا شروع ہو گئے تھے۔

مقامی ٹی وی چینل کے مطابق پوری عمارت میں آگ لگی ہوئی تھی اور آگ لگنے کے ایک گھنٹے بعد تک عمارت سے دھواں نکل رہا تھا ۔

اندازہ لگایا گیا کہ عمارت میں آگ لگنے کے وقت پچاس افراد تھے جو کہ فرائبرگ شہر سے قریباً چالیس کلومیٹر دور ہے۔

آگ بجھانے والے عملے نے مصنوعی تنفس کے آلات پہن رکھ تھے جب وہ عمارت میں داخل ہوئے۔

مقامی پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ ہم یہ بتا سکتے ہیں کہ اب تک چودہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور ان کی شناخت کا عمل جاری ہے۔

اسی طرح کافی زخمی ہونے والوں کو بھی مقامی ہسپتال لیجایا گیا۔

زخمی ہونے والوں کی معین تعداد میں اختلاف پایا جاتا ہے مگر ان کی تعداد چھ یا سات کے قریب ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔