صومالی فوج نے ایک اور اہم شہر آزاد کرا لیا

آخری وقت اشاعت:  اتوار 9 دسمبر 2012 ,‭ 14:40 GMT 19:40 PST

صومالیہ کو عشروں سے انتشار کا سامنا ہے

صومالی اور افریقی یونین کی افواج نے اسلام پرست عسکری تنظیم الشباب کے قبضے سے جوہر شہر کو آزاد کرا لیا ہے۔

ایک فوجی ترجمان اور رہائشیوں نے بتایا کہ فوجیوں کو کسی مزاحمت کا سامنا نہیں کرنا پڑا کیوں کہ عسکریت پسند پہلے ہی سے فرار ہو گئے تھے۔

جوہر الشباب کے قبضے میں سب سے بڑا شہر تھا۔ القاعدہ سے تعلق رکھنے والی اس تنظیم کو گذشتہ دو برسوں میں بیشتر شہری علاقوں سے نکال باہر کر لیا گیا ہے، لیکن ملک کے بہت سے دیہی علاقے اب بھی اس کے قبضے میں ہیں۔

جوہر نامی علاقہ دارالحکومت موغادیشو سے نوے کلومیٹر دور ہے، اور یہ ملک کے جنوبی اور مرکزی علاقوں کو ملانے والی سڑک پر واقع ہے۔ اس کے علاوہ یہ شہر ایک زرخیز علاقے کے وسط میں آباد ہے۔

نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اس شہر کا ہاتھوں سے نکلنا عسکریت پسندوں کے لیے بڑا دھچکا ہے۔

صومالیہ میں افریقی یونین (ایمیسم) کے ترجمان نے خبررساں ادارے اے ایف پی کو بتایا، ’ہم نے شہر پر کنٹرول حاصل کر لیا ہے اور اب ہم جوہر میں سکیورٹی قائم کر رہے ہیں۔‘

کرنل علی حمید نے کہا، ’ایمیسم کے فوجی صومالی نیشنل فورسز کے ہمراہ قصبے میں داخل ہو گئے۔ بہت کم لڑائی ہوئی کیوں کہ الشباب ہمارے آنے سے پہلے ہی وہاں سے فرار ہو چکی تھی۔‘

" بہت کم لڑائی ہوئی کیوں کہ الشباب ہمارے آنے سے پہلے ہی فرار ہو چکی تھی۔"

ایمیسم کے ترجمان

اے ایف پی کے مطابق الشباب کے ترجمان نے کہا کہ عسکریت پسند ’حکمتِ عملی کے تحت‘ شہر سے نکلے ہیں اور ’ابھی آس پاس ہی ہیں۔‘

عبدعزیز ابو معصب نے کہا کہ ’ہم جوہر پر دھاوا بولنے والوں کو شہر کے اندر اور باہر نشانہ بنائیں گے۔‘

افریقی یونین کی فوج نے الشباب کو اگست سنہ دو ہزار گیارہ میں موغادیشو سے باہر نکال دیا تھا۔ اس کے بعد انھوں نے عسکریت پسندوں کے قبضے سے کئی شہروں کو چھڑا لیا تھا۔

اس سال ستمبر میں نئے صومالی صدر کے عہدہ سنبھالنے کے بعد یہ امید پیدا ہو گئی ہے عشروں کے انتشار کے بعد اب ملک میں امن قائم ہو جائے گا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔