مصر: مُرسی کے حامیوں اور مخالفین کی ریلیاں

آخری وقت اشاعت:  بدھ 12 دسمبر 2012 ,‭ 21:54 GMT 02:54 PST
مصر

حزبِ اختلاف نے صدارتی محل کے نزدیک روکاوٹوں کو پار کر لیا تھا

مصر میں مجوزہ ریفرنڈ سے پہلے صدر مُرسی کے حامیوں اور مخالفین کی ریلیوں کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے اور ہزاروں مظاہرین قاہرہ کی سڑکوں پر نکل آئے ہیں۔

حزبِ اختلاف نے صدارتی محل کے نزدیک روکاوٹوں کو پار کر لیا تھا تاہم کسی طرح کے تشدد کی اطلاعات نہیں ہیں۔

صدر مُرسی نے ملک کے نئے مجوزہ آئین کی منظوری کے لیے اتوار کو ریفرنڈم کرانے کا اعلان کر رکھا ہے اور فوج سے کہا ہے کہ وہ سکیورٹی کی صورتِ حال کو سنبھالے۔

مصر میں حزبِ مخالف کے چار علیحدہ علیحدہ مارچ صدارتی محل کے نزدیک ہونے ہیں جسے فوج نے چاروں جانب سے سیمنٹ کے بلاک اور ٹینکوں سے گھیر رکھا ہے

اس وقت سینکڑوں سپاہی صدارتی محل کی حفاظت پر ہیں۔

مظاہرین نے محل کے گرد بنائی گئی عارضی دیوار کو پار کر لیا ہے۔ بی بی سی کے نامہ نگار جارج الیگائی کا کہنا ہے کہ ریپبلکن گارڈز نے مظاہرین کو آگے بڑھنے دیا اور اب وہ محل کے کمپاؤنڈ میں ہیں۔

نامہ نگار کا کہنا ہے کہ فوج کو گرفتاریاں کرنے کا اختیار دیا تو گیا ہے لیکن بظاہر فوج نے ان اختیارات کو استعمال نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریفرنڈم اور صدر مُرسی کے حامی تحریر سکوائر میں جمع ہو رہے ہیں۔

ادھر مصر نے عالمی مالیاتی فنڈ سے کہا ہے کہ وہ ملک میں جاری سیاسی بحران کے پیشِ نظر قرضے دینے میں تاخیر کرے۔

ملک کے وزیرِاعظم ہاشم قادیل نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ مصر نے تین ارب ساٹھ لاکھ ڈالر کے قرضے کو روکنے کی درخواست کی ہے۔

عالمی مالیاتی فنڈ نےکا کہنا ہے کہ وہ مصر میں جاری تبدیلی کے اس دور میں مدد کے لیے ہمیشہ تیار رہے گا اور اس قرضے کے بارے میں متعلقہ حکام سے بات کی جائے گی۔

فرروی 2011 میں سیاسی بحران اور اس کے نتیجے میں حسنِ ممارک کی حکومت کے خاتمے کے بعد سے ہی مصر کی معیشت بری طرح متاثر ہوئی ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔