شام کی وزارت داخلہ کی عمارت کے قریب دھماکے

آخری وقت اشاعت:  بدھ 12 دسمبر 2012 ,‭ 17:11 GMT 22:11 PST

سرکاری ٹی وی نے بتایا کہ دھماکے میں عمارت کا مرکزی داخلے کا راستہ تباہ ہو گیا۔

شام کے سرکاری ٹی وی کے مطابق دارالحکومت دمشق میں شام کی وزارت داخلہ کی عمارت کو نشانہ بنانے کے لیے تین دھماکے ہوئے ہیں۔

ان تینوں دھماکوں میں سے ایک کار بم دھماکہ تھا۔

اب تک موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ہلاکتوں کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

یہ عمارت شہر کے مضافات میں جنوب مشرقی علاقے میں موجود ہے جہاں حکومتی اور باغی افواج کے درمیان لڑائی ہو رہی ہے۔

سرکاری ٹی وی نے بتایا کہ دھماکے میں عمارت کا مرکزی داخلے کا راستہ تباہ ہو گیا۔

عمارت کے قریب رہنے والی ایک خاتون نے خبر رساں ادارے رائٹر کو بتایا کہ انہوں نے ایک بہت بڑے دھماکے کے بعد علاقے میں سائرن بجنے اور فائرنگ کی آوازیں سنیں۔

سرکاری خبر رساں ادارے سانا کے مطابق بدھ کے روز جرمانا کے علاقے میں موجود وزارت انصاف کے قریب دو کار بم دھماکوں کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔

دمشق کے مضافات میں باغیوں اور حکومتی افواج کے درمیان حالیہ دنوں میں لڑائی شدید ہو گئی ہے جب سے باغیوں نے شہر پر قبضے کی کوششیں تیز کی ہیں۔

امریکی صدر براک اوباما نے منگل کو شامی حزبِ اختلاف کے اتحاد کو شامی عوام کا واحد اور جائز نمائندہ تسلیم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

روس نے اس اقدام پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے اپنی تمام امیدیں باغیوں کی جانب سے ’لڑائی کے ذریعے فتح‘ پر لگا دی ہیں۔

فرانس پہلے ہی اس اتحاد کو شام کا ’واحد نمائندہ‘ کہہ چکا ہے جبکہ ترکی اور چھ خلیجی ممالک پہلے ہی اسے مکمل طور پر تسلیم کر چکے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔