غربِ اردن میں فلسطینی احتجاجی خیمے

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 11 جنوری 2013 ,‭ 17:52 GMT 22:52 PST

بین الاقوامی قوانین کے تحت مغربی کنارے میں یہودی آبادی کی تعمیر غیر قانونی ہے

مغربی کنارے میں اسرائیل کی جانب سے نئی یہودی بستیوں کی تعمیر کے خلاف فلسطینی خیمے لگا کر احتجاج کر رہے ہیں۔

فلسطینیوں نے ای ون نامی جگہ پر بیس بڑے خیمے کھڑے کیے ہیں۔ یہ جگہ یروشلم اور معالے ادومم کی یہودی آبادی کے درمیان ہے۔

اسرائیل نے اس جگہ پچھلے دسمبر میں یہودی آبادی قائم کرنے کے منصوبے کا اعلان کیا تھا اور اس منصوبے پر بین الاقوامی سطح پر اسرائیل پر تنقید کی گئی تھی۔

فلسطینیوں کا کہنا ہے کہ ای ون کے علاقے میں یہودی آبادکاری سے فلسطینی ریاست کے قیام کو نقصان پہنچے گا۔

بین الاقوامی قوانین کے تحت مغربی کنارے میں یہودی آبادی کی تعمیر غیر قانونی ہے۔

پاپولر سٹرگل کوآرڈینیشن کمیٹی کی ترجمان عبیر کوپتی نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کو بتایا ’ہم نے بیس خیمے کھڑے کیے ہیں اور ہمارے پاس اتنا سامان ہے کہ ہم یہاں کافی لمبے عرصے تاک قیام کرسکتے ہیں‘۔

انہوں نے مزید کہا ’ہم یہاں اس وقت تک رہنے کے لیے تیار ہیں جب تک کہ فلسطینیوں کو یہ حق نہیں مل جاتا کہ وہ اس جگہ اپنے مکان تعمیر کرسکیں‘۔

خیمے لگائے جانے کے کئی گھنٹوں بعد اسرائیل نے ان کو علاقہ چھوڑنے کا نوٹس جاری کیا۔ تاہم ترجمان نے کا کہنا ہے کہ ائی کورٹ نے اس بےدخلی کے نوٹس کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔

اسرائیل اس جگہ یہودی بستیاں تعمیر کرنے کی کوشش کئی سالوں سے کر رہا ہے۔

فلسطینیوں کی جانب سے یہ قدم اسی طرح کا قدم ہے جو اسرائیلی آبادکار اٹھاتے ہیں اگر ان کو بے دخل کیا جا رہا ہو۔

اسرائیل سکیورٹی ان آبادکاروں کو بے دخل کرتی ہے جو مغربی کنارے میں سرکاری طور پر منظور کی گئی بستی سے باہر مکان تعمیر کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

دوسری طرف غزہ میں ہسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک کسان کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا ہے۔

وزارت صحت کے مطابق بائیس سالہ کسان کو مہاجر کیمپ کے قریب اسرائیلیوں نے گولی مار کر ہلاک کیا ہے۔

تاہم اسرائیل کی جانب سے اس حوالے سے کوئی بیان نہیں آیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔