یونان: قوم پرست جماعت کے خلاف احتجاج

آخری وقت اشاعت:  اتوار 20 جنوری 2013 ,‭ 00:40 GMT 05:40 PST

یورپ کے ملک یونان کے دارالحکومت ایتھنز میں ابھرتی ہوئی جدید فسطائی خیالات والی سیاسی جماعت ’گولڈن ڈان‘ پارٹی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ہے۔

سنیچر کو اس احتتجاجی مظاہرے میں یونان کے شہریوں اور تارکن وطن نے حصہ لیا اور اس مظاہرے میں مبینہ طور پر دائین بازو کے شدت پسندوں کی جانب سے ہلاک کیے جانے والے پاکستانی تارکین وطن کا تابوت بھی رکھا گیا۔

انتہائی سخت گیر قوم پرست جماعت گولڈن ڈان ملک میں جاری معاشی بحران کی صورتحال پر عوام کے غم و غصے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے گزشتہ سال جون میں منعقدہ انتخابات میں اٹھارہ نشستیں حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئی تھی۔

کلِک یونان میں پاکستانیوں پر حملے

اس جماعت کو یورپ کی انتہائی دائیں بازو کی جماعت کہا جاتا ہے اور اس پر تارکین وطن پر حملوں کے الزامات لگتے رہتے ہیں۔

ستائیس سالہ پاکستانی تارکین وطن شہزاد لقمان کو بدھ کے روز ایتھنز کے مضافات میں اس وقت دو موٹر سائیکل سوار افراد نے حملہ کر کے ہلاک کر دیا جب وہ سائیکل پر اپنے گھر سے کام پر جا رہے تھے۔

یونان میں اس سے پہلے بھی پاکستانیوں سمیت تارکین وطن پر حملوں کے کئی واقعات پیش آ چکے ہیں۔

ایتھنز میں بی بی سی کے نامہ نگار مارک لوین کا کہنا ہے کہ یہ دن یونان کے ایک دوسرے رخ کے بارے میں بتایا ہے جس میں اقلیتوں سے نسلی امتیاز ابھر کر سامنا آ رہا ہے۔

نامہ نگار کے مطابق یونان اپنی مہمان نوازی میں مشہور ہے لیکن ملک میں جاری معاشی بحران قوم کو تبدیل کر رہا جس میں دائیں بازو کی جانب جھکاؤ ہے اور یہ دونوں مستقبل اور باہر کے لوگوں کو خوفزدہ کر رہے ہیں۔

اس مظاہرے کے علاوہ ایتھنز سے دور نسلی امتیاز کے خلاف مہم چلانے والے کارکنوں نے ایک سٹیج ڈرامہ پیش کیا۔ یہ سٹیج ڈرامہ بچوں کا تھا جس میں ایک یونانی خاندان کی کہانی بیان کی گئی جو چھٹیوں کے دوران ایک پاکستانی اور ایرانی خاندان سے ملتے ہیں اور جب یہ گروپ ایک ساتھ رہنا سیکھتا ہے تو خوف ختم ہونا شروع ہو جاتا ہے۔

اس ڈرامے کے ہدایت کار ویسلیز کولکلانی نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ’ یہ ڈرامہ تعصب، نسلی امتیاز اور اجنبی افراد سے نفرت کے متعلق تھا اور اس میں بتایا گیا کہ کس طرح سے اس پر عقل، مزاح اور سب سے بڑھ کر انصاف کے احساس سے قابو پایا جا سکتا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔