صدر اوباما نے دوسری مدت کے لیے حلف اٹھا لیا

آخری وقت اشاعت:  پير 21 جنوری 2013 ,‭ 20:42 GMT 01:42 PST

صدر براک اوباما گزشتہ سو سال میں دوسری مدت کے لیے منتخب ہونے والے ساتویں امریکی صدر ہیں

امریکہ کے صدر براک اوباما نے ایک سادہ نجی تقریب میں دوسری مدت کے لیے صدر کے عہدے کا حلف اٹھا لیا ہے۔

وائٹ ہاوس میں منعقدہ اس تقریب میں صدر اوباما نے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے اپنے عہدے کا حلف لیا۔

روایت کے مطابق پہلے نائب صدر نے حلف اٹھانا ہوتا ہے اس لیے جوزف بائیڈن نے اتوار کی صبح اپنی سرکاری رہائش گاہ پر سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے نائب صدر کے عہدے کا حلف اٹھایا۔

امریکی آئین کے مطابق صدر کو بیس جنوری کو حلف اٹھانا ہوتا ہے اور اس بار چونکہ بیس جنوری اتوار کو تھی اس لیے صدر اوباما نے ’بلیو روم‘میں حلف اٹھایا۔

حلف برداری اتوار کو ہونے کے باعث یہ تقریب پیر کو واشنگٹن میں دوبارہ منعقد ہو گی جس کو ہزاروں کی تعداد میں لوگ دیکھیں گے۔

اتوار جو حلف برداری کی تقریب میں صدر اوباما کی اہلیہ ان کی دونوں بیٹیاں، خاندان کے دیگر افراد اور نامہ نگار موجود تھے۔

صدر اوباما نے اپنی اہلیہ کے خاندان میں کئی سال سے زیر استعمال بائبل پر حلف اٹھاتے ہوئے عزم کیا کہ وہ امریکی آئین کا تحفظ اور دفاع کریں گے۔

امریکی صدر پیر کو منعقد ہونے والی تقریب میں یہ ہی الفاظ دوہرائیں گے اور اپنے آئندہ چار سال کے منصوبے کے بارے میں اعلان کریں گے۔

اس کے علاوہ نائب صدر جو بائیڈن بھی پیر کو دوبارہ حلف اٹھائیں گے۔

دوسری جانب ہزاروں کی تعداد میں کارکن اور رضاکار واشنگٹن میں حلف برداری کی تقریب اور جشن کے مقام پر تیاریوں کو آخری شکل دے رہے ہیں۔

اس کے لیے واشنگٹن مال پریڈ کے راستے میں سفید خیمے، ٹرالرز اور جنریٹرز نصب کیے جا رہے ہیں اور قریبی عمارتوں کو سفید، سرخ اور نیلے رنگ کے جھنڈوں سے مزین کیا گیا ہے۔

واشنگٹن میں بی بی سی کے نامہ نگار بن رائٹ کا کہنا ہے کہ صدر اوباما کو اپنی دوسری مدت میں کئی چیلنجز کا سامنا ہو گا جس میں بندوق رکھنے کے قانون میں تبدیلی، امیگریشن کے قانون میں اصلاحات اور قرضوں سے بحران سے نمٹنا شامل ہے۔

اس سے پہلے سال دو ہزار نو میں صدر اوباما کی پہلی حلف برداری کی تقریب میں تقریباً بیس لاکھ لوگوں نے شرکت کی تھی تاہم بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ چار سال بعد ہو سکتا ہے کہ اتنی بڑی تعداد شریک نہ ہو لیکن اس کے ساتھ ہو سکتا ہے کہ لوگ ایسی تقریب زور دیکھنا چاہیں جس میں ایک سیاہ فام امریکی صدر دوسری مدت کے لیے حلف اٹھائیں۔

واشنگٹن کے نیشنل مال پر پیر کی صبح سویرے سے ہی شدید سردی کے پرواہ نہ کرتے ہوئے بڑی تعداد میں لوگ پہنچنا شروع ہو جائیں گے تاکہ اپنے منتخب کردہ صدر کی حلف برادری کی تقریب دیکھ سکیں اور صدر کی تقریر سن سکیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔