پنیر جو ایک ہفتے تک جلتا رہا

آخری وقت اشاعت:  بدھ 23 جنوری 2013 ,‭ 06:22 GMT 11:22 PST

بھورے رنگ کے اس بکری کے پنیر کو برونوسٹ کہا جاتا ہے اور یہ ایک نفیس خوراک کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے

ناروے میں ایک سرنگ کو اس وقت ٹریفک کے لیے بند کر دیا گیا جب بکری کے دودھ سے بنے پنیر سے لدے ہوئے ایک ٹرک میں آگ بھڑکنے کے بعد ایک ہفتے تک جلتی رہی۔

ایک ٹرک جس پر ستائیس ٹن کے قریب بکری کے دودھ سے بنا ہوا پنیر لدا ہوا تھا جسے چینی ملے شیرے میں جلا کر بھورے رنگ کا بنایا جاتا ہے اس سرنگ سے گزر رہا تھا۔

جب یہ ٹرک شمالی ناروے میں برٹالی سرنگ سے گزر رہا تھا تو اس میں آگ لگی۔

بھورے رنگ کے اس بکری کے پنیر کو ’برونوسٹ‘ کہا جاتا ہے اور یہ ایک نفیس خوراک کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔

اس ٹرک میں ایک ہفتے تک آگ لگی رہی جس سے نکلنے والے زہریلے دھویں سے امدادی کارکنوں کو کام کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

حکام کے مطابق اس آگ کے نتیجے میں سرنگ کو شدید نقصان پہنچا ہے جسے اب کئی ہفتوں تک بند رکھا جائے گا۔ اس حادثے کے نتیجے میں کوئی بھی زخمی یا ہلاک نہیں ہوا۔

ماہر جغرافیائی امور ویگو ارونسن نے ناروے کے ایک ٹی وی چینل کو بتایا کہ ’ہم تب تک سرنگ میں نہیں جا سکتے جب تک یہ نہ پتا ہو کہ یہ محفوظ ہے۔‘

پولیس افسر ویگو برگ نے کہا کہ ’چربی کی زیادتی اور چینی کے شیرے نے اسے جلنے کے لیے بہترین بنا دیا تھا جس کے بعد گرمی پہنچنے پر یہ ایسے جلنا شروع ہوئی جیسے پٹرول جلتا ہے‘۔

ٹرک کے ڈرائیور نے آگ کا پتہ چلتے ہیں اس کو سرنگ کے اندر تین سو میٹر پر ہی چھوڑ دیا تھا۔

ناروے کے سڑکوں کے محکمے کے ایک افسر نے بتایا کہ یہ ان کی یاداشت میں پہلا واقعہ ہے جس میں ناروے کی سڑکوں پر پنیر کو آگ لگی ہوئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ انہیں نہیں معلوم تھا کہ پنیر اتنا زیادہ جلتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔