امریکہ: سی آئی اے کے سابق ایجنٹ کو سزا

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 26 جنوری 2013 ,‭ 21:10 GMT 02:10 PST

جون نے اعتراف کیا تھا کہ انہوں نے سی آئی کے ایک سابق انڈر کور ایجنٹ کا نام ایک صحافی کو بتایا تھا

امریکہ کے جاسوسی ادارے سی آئی اے کے ایک سابق ایجنٹ کو ایک جاسوس اہلکار کا نام ظاہر کرنے پر تیس مہینے جیل کی سزا ہوئی ہے۔

اڑتالیس سالہ جون کیریاکو نے 2012 میں انٹیلیجنس کے قانون کی خلاف ورزی کا اعتراف کیا تھا۔

جاسوسی کے اس قانون کے تحت ستائیس سال میں کسی کو سزا نہیں ہوئی تھی۔

جون نے اعتراف کیا تھا کہ انہوں نے سی آئی کے ایک سابق انڈر کور ایجنٹ کا نام ایک صحافی کو بتایا تھا۔

یہ سابق انڈر کور ایجنٹ زیر حراست افراد سے تفتیش اور ان پر واٹر بورڈنگ ٹارچر یا پانی سے دم گھٹنے کا تشدد کرنے میں شامل تھا۔

جون کے وکلا کا موقف تھا کہ ان کا موکل ادارے کے اندر ہونے والے غیر قانونی سرگرمیوں کو سامنے لانے والا ہے۔

جبکہ ضلعی جج لئونی برنکیما نے اس موقف کو رد کیا اور کہا کہ ان کو اگر اختیار ہوتا تو وہ جون کو اور لمبی سزا دیتیں۔

ایک سمجھوتے کے تحت جون کو تیس مہینوں کی سزا ہونی تھی۔

اس حوالے سے تحقیقات اس وقت شروع ہوئیں جب کچھ وکلا نے مشتبہ دہشت گردوں کی طرف سے قانونی درخواست دائر کی جس میں وہ تفصیلات بھی شامل تھیں جو حکومت نے مہیا نہیں کی تھیں۔

عدالت کے ریکارڈ کے مطابق یہ کڑی جون کیریاکو تک پہنچی۔

وکیل استغاثہ کے مطابق جون نے انڈر کور ایجنٹ کا نام ایک صحافی کو بتایا جنہوں پھر یہ نام گونتنامو بے میں ایک قیدی کے وکیل کے لیے ریسرچ کرنے والے کو بتایا۔

ان کا موقف تھا کہ جون نے صرف شہرت حاصل کرنے اور اپنا سماجی مقام بڑھانے کے لیے اندر کی خبر کا سودا کیا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔