وینی زوئیلا: جیل ہنگامے میں متعدد ہلاک

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 26 جنوری 2013 ,‭ 06:13 GMT 11:13 PST

وینی زوئیلا میں ہسپتال حکام کے مطابق ملک کے مغربی حصے میں واقع ایک جیل میں ہونے والے ہنگامے کے نتیجے میں کم سے کم پچاس افراد ہلاک اور نوے زخمی ہو گئے۔

وینی زوئیلا کے وزیر برائے جیل خانہ جات ایرس ویریلا کے مطابق ہنگامہ اس وقت شروع ہوا جب مقامی میڈیا نے خبر نشتر کی کہ اریبانا جیل میں ہتھیاروں کی تلاش کے لیے سپاہیوں کو بھیجا گیا ہے۔

ہسپتال کے ڈائریکٹر نےخبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ مرنے والوں میں قیدی، گارڈز اور جیل میں کام کرنے والے افراد شامل ہیں۔

وینی زوئیلا میں ایک این جی او کے کوآرڈینیٹر کارلوس پالما نے بی بی سی کو بتایا کہ مرنے والے افراد کی تعداد میں اضافہ ہو سکتا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اریبانا جیل کا شمار ملک کے خطرناک ترین جیلوں میں ہوتا ہے۔

وینی زوئیلا کے دارالحکومت کاراکس میں موجود بی بی سی کی نامہ نگار کا کہنا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ قیدی ٹی وی پر ہتھیاروں کو تلاش کرنے کی خبر سننے کے بعد نیشنل گارڈ کے آنے کا انتظار کر رہے تھے۔

وینی زوئیلا کی حکومت نے جیل میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد کے بارے میں کوئی سرکاری بیان جاری نہیں کیا تاہم اس کا کہنا ہے کہ وہ اس واقعہ کی مکمل تفتیش کرے گی۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔