ڈاکٹر خلیل ڈیل کو رابرٹ برنز اعزاز

آخری وقت اشاعت:  اتوار 27 جنوری 2013 ,‭ 13:39 GMT 18:39 PST
خلیل ڈیل

خلیل ڈیل بین الاقوامی امدادی تنظیم ریڈ کراس کے ساتھ کام کرتے تھے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں گزشتہ سال ہلاک ہونے والے بین الاقوامی امدادی تنظیم ریڈ کراس کے پروگرام منیجر ڈاکٹر خلیل ڈیل کو سال دو ہزار تیرہ کے رابرٹ برنس ہیمونیٹریئن اعزاز سے نوازا گیا ہے۔

خلیل ڈیل برطانیہ کے شہر یارک میں پیدا ہوئے اور کئی برسوں تک سکاٹ لینڈ کے شہر ڈمفرائس میں مقیم تھے۔

خلیل ڈیل نے تقریباً تیس برس تک پوری دنیا کے شورش زدہ علاقوں میں امدادی کارکن کے طور پر کام کیا۔

ایلوائے میں منعقدہ ایک تقریب میں خلیل ڈیل کو اس اعزاز سے نوازا گیا ہے۔

خلیل ڈیل کو گزشتہ سال جنوری میں کوئٹہ میں اغواء کیا گیا تھا اور اپریل میں ان کی لاش کوئٹہ میں ایک سڑک کے کنارے سے ملی تھی۔

رابراٹ برنس اعزاز ان افراد کو دیا جاتا ہے جنہوں نے’امدادی تنظیموں کے ذریعے یا ذاتی طور پر لوگوں کو زندگی بچائی ہے یا اس کو بہتر بنایا ہو‘۔

سکاٹ لینڈ کے وزارتِ خارجہ اور عالمی ترقی کی جانب سے اس اعزاز کو قبول کرتے ہوئے خلیل ڈیل کے بھائی حمزہ یوسف زئی نے کہا ہے کہ اگر ان کے بھائی زندہ ہوتے تو وہ اس اعزاز کو باعث افتخار سمجھتے‘۔

اس موقع پر ان کا کہنا تھا’خلیل کو سکاٹ لینڈ سے بے حد پیار تھا اور یہی ان کا گھر تھا۔ انہیں اس اعزاز ملنے پر بے حد خوشی ہوتی‘۔

ان کا کہنا تھا ان کے بھائی کو ملنے والا یہ اعزاز ان کی وراثت اور اس بات کی ’گواہی ہے کہ انہوں نے کتنی زندگیوں کو بدلا ہے‘۔

ان کا مزید کہنا تھاکہ’خلیل کو بہت سے لوگوں سے پیار اور عزت ملی ہے۔ مجھے اپنے بھائی پر ناز ہے۔ اور مجھے خوشی ہے کہ میرے بھائی کے کام اور کوششوں کو اس بہترین اعزاز سے نوازا گیا ہے‘۔

جنوبی اشائر کی کونسل اور رابرٹ برنس ایوارڈز کے ججوں کے پینل کی صدارت کرنے والے ڈیوڈ انڈرسن کا کہنا تھا کہ اس برس اعزاز کے لیے جو تجاویز آئیں تھیں ان کی فہرست بہت بڑی تھی اور ان میں سے کسی ایک فاتح کا نام منتخب کرنا مشکل عمل تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔